تازہ ترین

چترالی عوام کے اندر اپنے بچوں کو بہتر اور معیاری تعلیم دلوانے کا جذبہ اور ہمت موجود ہے،کمانڈنٹ کرنل نظام الدین شاہ

چترال(رپورٹ شہریار بیگ) کمانڈنٹ چترال سکاؤٹس کرنل نظام الدین شاہ نے کہا ہے کہ چترال قدرتی آفات کا شکار اور پہاڑی پسماندہ علاقہ ہونے کے باوجود عوام کے اندر اپنے بچوں کو بہتر اور معیاری تعلیم دلوانے کا جذبہ اور ہمت موجود ہے۔فرنٹیر کور پبلک سکول اینڈ کالج کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ اس حقیقت کو پیش نظر رکھتے ہوئے معیاری درسگاہ قائم کر لی جس میں داخلہ ہر ایک کے دسترس میں ہے۔بہت کم عرصے میں FCPSنے بہت زیادہ ترقی کر لی ہے ان خیالات کا اظہار اُنہوں نے فرنٹئیر کور پبلک سکول اینڈ کالج میں انٹر سکولز سپورٹس گالا کے اختتامی پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اُنہوں نے کہا کہ ایف سی پی ایس سے فارع ہونے والا طالب علم ملکی سطح پر مقابلہ کرنے کی قوت حاصل کرے گا۔کرنل نظام الدین شاہ نے کہا کہ ہم عنقریب چترال میں آرمی جی او سی ملاکنڈ دلچسپی رکھتے ہیں۔ہم تدریس کے جدید ترین طریقے اپنا کر تعلیم کی معیار کو بڑھانے میں مصروف ہیں۔بچوں میں نقل کے رجحان کی حوصلہ شکنی اور کتب بینی کا شوق پیدا کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ایف سی پی ایسکا ہر بچہ پُر اعتماد ہے اور اُنہیں اپنی صلاحیتوں پر پورا بھروسہ ہے۔اس موقع پر کرنل نظام الدین شاہ نے انٹر سکولز اینڈ انٹر ہاؤس سپورٹس گالا میں طالبہ اور طالبات کے الگ الگ مختلف کھیلوں فٹ بال،کرکٹ،ریس،رسہ کشی،سائیکل ریس،موسیقی، پینٹنگ ،بیڈ منٹن اورکوکنگ کے چار روزہ مقابلے ہوئے تھے انعامات اور شیلڈ تقسیم کی۔فٹ بال کے ونر FCPSدروش،کرکٹ کے چترال پبلک سکول اینڈ کالج،موسیقی میں FCPSچترال،رسہ کشی میں FCPSدروش،سائیکل ریس میں FCPSچترال طالبات میں بیڈ منٹن میں آغا خان ہائیر سیکنڈری سکول کوراغ،رسہ کشی میںّ غا خان ہائیر سیکنڈری سکول کوراغ نے شیلڈ حاصل کیں۔اس ایونٹ میں FCPSچترال،FCPSدروش،FCPSمستوج،،آغا خان ہائیر سیکنڈری سکول کوراغ ،چترال پبلک سکول اینڈ کالج،حرا پبلک سکول،اسلامک ایجوکیشن اور برائیٹ فیوچر سکول نے حصہ لیا تھا۔اس موقع پر ٹیجر نوید اور سلیم نے گٹار پر چترالی دھن میں گا کر شرکاء سے زبردست داد حاصل کی۔ تقریب میں سٹیج سکریٹری کے فرائض مصباح الدین اور فرحت جبین نے انجام دیں۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
دوسروں کے ساتھ اشتراک کریں

متعلقہ خبریں/ مضامین

error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔
إغلاق