اجنو پُل یا پُلِ صراط۔ – Chitral Express

Premier Chitrali Woolen Products

اجنو پُل یا پُلِ صراط۔

بونی(ذاکر زخمی)کہنے کویہ پُل اجنو کے ساتھ منسلک ہے لیکن اگر یہ ہی پُل نہ ہو تو ریچ کا واسیع علاقہ پورے علاقے سے منقطع رہتا ہے2015  کے سیلاب میں یہ ہی پُل بُری طرح متاثر ہوئی تھی لیکن عوام کے خیر خواہی کے دعویدار حکومت، ممبران اور لوکل ممبران اس پُل کو ا س طرح نظر انداز کر دیا کہ گویا اس پُل کی کوئی افادیت ہی نہیں۔ حالانکہ اجنوگاوں کا جملہ دارومداراسی پُل پر ہے ساتھ گورنمنٹ ہائی سکول اس پُل کے پار ہے جہاں سے گزر کر روزانہ سینکڑوں بچے ،بچیاں سکول پہنچ جاتے ہیں اور اپس گھر پہنچ جاتے ہیں اور علاقہ ریچ ایک واسیع علاقہ ہے انہیں ریچ سے دوسروے علاقوں تک پہنچنے کا یہ ہی واحد زمینی راستہ ہے ۔ ابھی یہ ہی پُل ایک دو دن کی مہمان بن کے کھڑی ہے ۔اور کسی بھی وقت دریا کے تند و تیزلہروں کی نذر ہو سکتی ہے ۔ اللہ نہ کرے کہ اس پُل پر کوئی نا خوشگوار واقعہ پیش نہ ائیے۔ یہ لاوارث پُل کسی مسیحا کی منتظر ہے کہ کوئی ائیے اللہ کے نام چند روپے اس پر خرچ کرکے علاقے کو بڑی مشکلات سے بچائیے۔
اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
دوسروں کے ساتھ اشتراک کریں

یہ خبر بھی پڑھیں

دھڑکنوں کی زبان …. شاکرین استاد

’’شاکرین استاد پنشن پہ گیا ‘‘یہ ایک ایسا جملہ ہے جس پہ کوئی اعتبار نہیں ...


دنیا بھر سے