پہلی مرتبہ چترال میں خواتین کو جنگلات کی رائلٹی میں حصہ دینے کے اقدامات کا آغاز کر دیا گیا – Chitral Express

Premier Chitrali Woolen Products

پہلی مرتبہ چترال میں خواتین کو جنگلات کی رائلٹی میں حصہ دینے کے اقدامات کا آغاز کر دیا گیا

 چترال( چترال ایکسپریس) چترال کی تاریخ میں پہلی مرتبہ جنگلاتی علاقوں کے خواتین کو رائلٹی میں حصہ دینے کے اقدامات کا آغاز کردیا گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق خیبر پختونخوا کے چیف سیکرٹری کی خصوصی ہدایت پر جنگلاتی علاقے میں بسنے والے خاندانوں کے خواتین کو بھی جنگلاتی رائلٹی میں انکا حصہ دینے کیلئے اقدامات شروع کر دئیے گئے ہیں اوراس ضمن میں ضلعی انتظامیہ نے جنگلاتی علاقوں میں سروے کا آغاز کردیا ہے۔ اس حوالے سے ڈپٹی کمشنر چترال نے متعدد مواقع پر عوامی اجتماعات سے خطاب کرتے ہوئے عندیہ دیا تھا کہ خواتین کوجنگلات کی رائلٹی میں بھی اسلامی تعلیمات کے مطابق انکا حق دیا جائیگا۔ واضح رہے کہ اس سے قبل جنگلات کی رائلٹی میں خواتین کو حصہ نہیں دیا جاتا تھا جبکہ جنگلاتی علاقوں میں بسنے والے خاندان کے صرف مرد ارکان رائلٹی کی رقم وصول کرتے تھے۔ اب اگر چیف سیکرٹری کی ہدایت پرعمل کرتے ہوئے خواتین کو رائلٹی میں انکا حصہ دیا گیا تو یہ تاریخی کارنامہ ہوگا اور اسے پسماندہ علاقوں میں بسنے والےغریب خاندانوں کو کافی فائدہ پہنچے گا۔ عوامی حلقوں نے انتظامیہ کے اس اہم قدم کو سراہتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ رائلٹی کی تقسیم کا نظام بھی صاف شفاف بنایا جائے کیونکہ ہمیشہ سے رائلٹی کی تقسیم کا عمل مشکوک رہا ہے اور چند افراد رائلٹی کے پیسوں کی مدد سے راتوں رات کروڑ پتی بن گئے مگر غریب لوگوں کی حالت نہیں سدھر سکی۔ اس لئے اس امر کو یقینی بنانا بھی ازحد ضروری ہے کہ رائلٹی کے رقم کی تقسیم صاف شفاف انداز میں ہو اور حقدار کو اسکا حق ملے۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
دوسروں کے ساتھ اشتراک کریں

یہ خبر بھی پڑھیں

بونی رینج کے نگہبانوں کی تنخواہوں کو وعدے کے مطابق ریلیز کیے جائیے۔متاثرہ نگہبانوں کاچیف جسٹس سے نوٹس لینے کی اپیل

بونی(نمائندہ چترال ایکسپریس)محمدنبی خان ،نور عالم اور عطاء الہیٰ نے ایک اخباری میں کہا کہ ...


دنیا بھر سے

error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔