ٹنل کو ہر وقت ٹرانسپورٹ کے لئے کھلا رکھا جائے بصورت دیگر یونین راست قدم اٹھانے پر مجبور ہوگا۔تریچ میر ڈرائیور ز یونین چترال – Chitral Express

Premier Chitrali Woolen Products

ٹنل کو ہر وقت ٹرانسپورٹ کے لئے کھلا رکھا جائے بصورت دیگر یونین راست قدم اٹھانے پر مجبور ہوگا۔تریچ میر ڈرائیور ز یونین چترال

چترال (نمائندہ چترال ایکسپریس) تریچ میر ڈرائیور ز یونین کے صدر صابر احمد صابرنے یونین کے سرپرست حاجی غلام محی الدین اور دیگر عہدیداروں اسفندیار خان، حاجی شیر بہادر، زاہد خالق، فضل الرحمن تمنا، اخلاق حسین ، عبدالصمد کی معیت میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ لواری ٹنل کو بلاوجہ بند رکھا جارہا ہے جبکہ کام مکمل ہوکر افتتاح بھی ہوچکا ہے اور ٹنل کو ہر وقت ٹرانسپورٹ کے لئے کھلا رکھا جائے بصورت دیگر یونین راست قدم اٹھانے پر مجبور ہوگا۔ انہوں نے دیگر مطالبات پیش کرتے ہوئے پشاور سے چترال آنے والے مسافر انتہائی تکلیف میں ہیں اور قصہ خوانی کے ارد گرد ٹکٹ گھروں میں ڈرائیوروں کو لوٹ لئے جارہے ہیں جس کے لئے حاجی کیمپ کے اندر چترال کے لئے خصوصی اڈا کھولا جائے۔ انہوں نے لواری ٹاپ کو بھی فوری طور پر کھولنے کا مطالبہ کیا تاکہ عوام اور ٹرانسپورٹ بلا رکاوٹ جاری رہے کیونکہ عوام انتہائی تکلیف میں ہیں۔ ڈرائیور یونین کے رہنماؤں نے بائی پاس روڈ اور چترال دروش روڈ پر قائم کیٹ آئیز سے بنی اسپیڈ بریکروں کو ختم کرنے کا بھی مطالبہ کیا کیونکہ انتہائی مہنگی ٹائر ان لوہے کی بریکروں کی وجہ سے خراب ہوتے ہیں۔ ڈرائیور رہنماؤں نے دروش میں تمام غیر قانو نی اڈوں کو بند کرنے کا بھی مطالبہ کیا۔ اس موقع پر تریچ میر ڈرائیورز یونین اور آل فلائنگ کوچ ایسوسی ایشن نے آپس میں یکجہتی کا اعلان کرتے ہوئے اس عزم کا اعادہ کیا کہ وہ ایک دوسرے کا احترام کرتے ہوئے ڈرائیور برادری کی خدمت کرتے رہیں گے۔ حاجی غلام محی الدین نے اسفندیار خان اور صابر احمد صابر کے درمیان اختلافات ختم ہونے اور عدالت میں راضی نامہ کے ذریعے کیس واپس لے کر آپس میں شیر وشکر ہونے پر دونوں کے جذبات کو سراہا۔
اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
دوسروں کے ساتھ اشتراک کریں

یہ خبر بھی پڑھیں

نائب ناظم وی سی کجو،کاری ،راغ کا ڈی سی چترال سے بونی چترال روڈ کے کھنڈرات کی ناقص مرمت کا نوٹس لینے کا مطالبہ 

چترال(نمائندہ چترال ایکسپریس)نائب ناظم وی سی کجو،کاری اور راغ ظہیر الدین بابرنے ایک اخباری بیان ...


دنیا بھر سے