لا سپور پولو ٹیم چترال کے دوسری ٹیموں کے ساتھ سوتیلی ما ں جیسا سلوک بند کیا جائے۔سردار احمد خان یفتالیٰ – Chitral Express

Premier Chitrali Woolen Products

لا سپور پولو ٹیم چترال کے دوسری ٹیموں کے ساتھ سوتیلی ما ں جیسا سلوک بند کیا جائے۔سردار احمد خان یفتالیٰ

چترال(نمائندہ چترال ایکسپریس) سردار احمد خان یفتالیٰ کپتان لاسپور پولو ٹیم نے ایک اخباری بیان میں کہا ہے کہ جشن شندور کی تاریخ میں اس سال لاسپور اور غذر کے ٹیم مہمان خصوصی نگران وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا جسٹس (ر) دوست محمد خان نے جیتنے والے ٹیم کے لئے دس لاکھ روپے کے انعام اعلان کیاتھا جو کہ پوری ضلعی انتظامیہ کی موجودگی میں ہوا تھا۔جس میں نہ (چترال اے )ٹیم کا ذکر تھا نہ( چترال بی) ٹیم کا ذکر کیا تھا۔مہمان خصوصی کے الفاظ ریکارڈ میں ہیں۔جس میں 7 جولائی کو کھیلے گئے ٹیموں کا ذکر ہیں،سب ڈویژن مستوج اور (چترال ڈی) اس میں شامل ہیں۔ اب جبکہ ہمیشہ کی طرح لاسپور کی ٹیم اور چترال کے دوسری ٹیموں کے ساتھ سوتیلی ماں کا سلوک کیا جا رہا ہے۔لاسپور ٹیم کی جائز حق ان سے چھینے کی کوشش کی جا رہی ہے ۔جبکہ شندور میں ہر میچ اپنی نوعیت کا فائنل میچ ہوتا ہے ہر ٹیم چترال ہی کی نمایندگی کرتا ہے اُنہوں نے کہا کہ یہ شندور کی تاریخ میں ہمیشہ کی طرح اس بار بھی سازش ہو رہاہے کہ ایک ٹیم کی مہمان خصوصی کے اعلان کردہ انعامات کو بازورشمشیر دوسرے ٹیم کو دیا جا رہاہے جوکہ سراسر نہ انصافی حق تلفی کی انتہا ہے۔ اس سازش کو ہم ہر گز کامیاب ہونے نہیں دینگے ہمیں ہمارا جائز حق ادا کیا جائے ،اُنہوں نے کہا کہ اگر لاسپور کی ٹیم کے ساتھ یہ رویہ جاری رہا تو ہم دوسری ٹیموں کے ساتھ مل کر عدلیہ کا رُخ کرینگے اور ساتھ اگلے سال نہ لاسپور کی ٹیم جشن شندور میں شرکت کرے گی اور نہ غذر کے ٹیم شرکت کرے گی اور نہ ہم شندور میں دوسری ٹیموں کو کھیلنے دینگے۔اُنہوں نے وقتی طور پر انتظامیہ کو اگاہ کرتے ہوئے کہا کہ اگر ان ٹیموں کو مطمین نہیں کیاگیا تو اگلے سال حالات کی پوری ذمہ داری انتظامیہ پر ہو گی۔اگر اس ثقافتی و قومی کھیل کو بھی پیسہ بنانے کا ذریعہ بنایا گیا تو وہ دن دور نہیں جب بہت جلد ہم اس کھیل کو کھو دینگے۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
دوسروں کے ساتھ اشتراک کریں

یہ خبر بھی پڑھیں

’’پرتشدد انتہا پسندی کی روک تھام‘‘کے موضوع کے حوالے سے یونیورسٹی آف چترال میں ورکشاپ کا انعقاد

چترال (نمائندہ چترال ایکسپریس) یونیورسٹی آف چترال میں سنٹر فار ریسرچ اینڈ سیکورٹی اسٹڈیز کے ...


دنیا بھر سے

error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔