تازہ ترین

انتخابی مہم میں پارٹی کے امیدواروں کے لئے کام نہ کرنے والوں کے خلاف کاروائی کی جائیگی۔سلیم خان

چترال(نمائندہ چترال ایکسپریس)پاکستان پیپلزپارٹی کے ضلعی صدراور سابق ممبرصوبائی اسمبلی سیلم خان کے زیرصدرات چترال کے مقامی ہوٹل میں ایک اجلاس منعقدا ہوا جس میں سینئرنائب صدرشریف حسین،علماء ونگ کے ضلعی صدرممتازعالم دین قاری نظام الدین، جنر ل سیکرٹری علماء ونگ قاری خلیل احمد،ضلعی انفارمیشن سیکرٹری قاضی فیصل احمد،سب ڈویژن چترال کے صدرعالم زیب ایڈوکیٹ،جنرل سیکرٹری صمدشاہ ،اپرچترال کے صدرسابق ناظم امیراللہ،جنرل سیکرٹری حمیدجلال،تحصیل دروش کے صدرعبدالحمیدایڈوکیٹ ،جنرل سیکرٹری سکندرحیات،عبدالرزق براموش،سرورکما ل ایڈوکیٹ،یوسی ارندوکے صدرحاجی غازی خان اوردیگرکارکنوں نے کثیرتعدادمیں شرکت کی۔ضلعی صدرسلیم خان نے خطا ب کرتے ہوئے کہاکہ ہم اپنے اورپاکستان پیپلزپارٹی چترال کی طرف سے عوام چترال کابے حدمشکورہیں کہ جنہوں نے 25جولائی کے دن عام انتخابات میں اپناقیمتی ووٹ ہمارے حق میں دے کرہمیں کامیاب کرنے کی کوشش کی۔یہ الگ بات ہے کہ اس دفعہ ہمارے نصیب میں نہیں تھا۔انہوں نے کہاکہ الیکشن ہارنے کے باوجودبھی ہم اپنے سابقہ روایات کوبرقراررکھتے ہوئے عوام چترال کی خدمت میں ہمیشہ پیش پیش رہیں گے اورچترال کے مختلف مسائل کواُجاگرکرنے میں اپناکرداراداکرتے رہیں گے۔انہوں نے چترال میں مضبوط اپوزیشن کا کرداراداکرکے چترال کی فلاح وبہبودمیں دن رات کام کرنے کے عزم کا اظہار کیا۔ سلیم خان نے کہاکہ الیکشن 2018میں جماعت اسلامی کے ڈسٹرکٹ ناظم مغفرت شاہ ،تحصیل ناظم چترال مولاناالیاس اورتحصیل ناظم مستوج مولانامحمدیوسف نے الیکشن کمیشن قوانیں کی خلاف ورزی کرتے ہوئے سرکاری گاڑیوں کااستعمال کرکے الیکشن مہم میں بھرپورحصہ لیا۔جس پرپاکستان پیپلزپارٹی ان کی شدیدالفاظ میں مذمت کرتی ہے ۔انہوں نے کہاکہ اگلے سال منعقد ہونے ہوالے بلدیاتی انتخابات کے سلسلے میں ابھی سے کام شروع کرنے کی ضرورت ہے اور پارٹی کے مخلص کارکن تیاری کریں اور ضلعے کے طول وعرض میں بھٹو خاندان کے شیدائیوں تک رسائی کریں۔انہوں نے یہ بات وضاحت سے بتائی کہ اس عام انتخابات میں پارٹی کے ان عہدیداروں کے خلاف سخت کاروائی کی جائے گی ۔جنہوں نے پارٹی سے بے وفائی کرکے دوسرے پارٹی کے لئے کام کیا۔
اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
دوسروں کے ساتھ اشتراک کریں

متعلقہ خبریں/ مضامین

error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔
إغلاق