چترال میں پولیس شہداء کی فیملی کو ہر ممکن سہولیات پہنچانے کی کوشش کی جارہی ہے،ڈی پی او چترال فرقان بلال – Chitral Express

Premier Chitrali Woolen Products

چترال میں پولیس شہداء کی فیملی کو ہر ممکن سہولیات پہنچانے کی کوشش کی جارہی ہے،ڈی پی او چترال فرقان بلال

چترال (نمائندہ چترال ایکسپریس ) چترال میں یوم شہدائے پولیس اس عزم کے ساتھ منائی گئی کہ دہشت گردی سے نمٹنے کے ساتھ ساتھ عوام کی جان ، مال اور ابرو کے حفاظت میں کوئی کسر نہیں چھوڑیں گے اور تن من دھن کی قربانیوں کا سفر جاری رکھا جائے گا تاکہ وطن عزیز میں امن و سکون کی فضا قائم ہواور شہری سکھ کی نیند سوسکیں۔ ڈسٹرکٹ پولیس لائنز میں صبح کا آغاز شہداء کے لئے قرآن خوانی سے ہوئی جبکہ بعدازاں ڈسٹرکٹ پولیس افیسر چترال فرقان بلال اور ڈسٹرکٹ ناظم مغفرت شاہ نے پولیس لائنز کے احاطے میں واقع یادگار شہداء پر پھول چڑھائے اور شہداء کے روح کی ایصال ثواب کے لئے اجتماعی دعامانگی گئی ۔ اس موقع پر پولیس کا ایک چاق وچوبند دستے نے یادگار شہداء کو سلامی دی۔ اس موقع پر اپنے خطاب میں ضلع ناظم مغفرت شاہ نے کہاکہ چترال پولیس نہ صرف پورے صوبے بلکہ پورے ملک کے لئے رول ماڈل کی حیثیت رکھتی ہے جس نے اپنی پیشہ ورانہ مہارت کا مظاہرہ ہر ازمائش کے وقت کیا ہے اور چترال میں جرائم کی کمی میں اس فورس کا اہم کردار رہا ہے جبکہ سوات میں دہشت گردی کے خلاف جنگ میں بھی اس ضلعے کی پولیس نے آخری چٹان کا کردار ادا کرکے شجاعت وبہادری کی داستان رقم کی جس پر اہل چترال فخر کرتے رہیں گے ۔ انہوں نے کہاکہ پولیس کے شہداء نے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کرکے ہمیں امن کی فضا اور تحفظ کا احساس فراہم کیا۔ ڈسٹرکٹ پولیس افیسر فرقان بلال نے بھی شہداء کو زبردست خراج تحسین پیش کیااور کہاکہ ڈیوٹی کی لائن پر جانوں کا نذرانہ پیش کرنا غیر معمولی بات ہوتی ہے۔ انہوں نے کہاکہ چترال میں پولیس شہداء کی فیملی کو ہر ممکن سہولیات پہنچانے کی کوشش کی جارہی ہے اور انہیں تنہائی کا احساس ہونے نہیں دیا جائے گا۔ یوم شہداء کے موقع پر پولیس کی طرف شہداء کے گھرانوں میں تخائف پہنچائیے گئے۔ ایڈیشنل ایس پی نورجمال، ڈی ایس پی ہیڈ کوارٹر ز محی الدین کے علاوہ ڈی ایس پی ظفر احمد، ڈی ایس پی عبدالستار، ڈی ایس پی اقبال کریم اور فاروق جان اور دوسرے سینئر پولیس افسران بھی موجود تھے ۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
دوسروں کے ساتھ اشتراک کریں

یہ خبر بھی پڑھیں

’’پرتشدد انتہا پسندی کی روک تھام‘‘کے موضوع کے حوالے سے یونیورسٹی آف چترال میں ورکشاپ کا انعقاد

چترال (نمائندہ چترال ایکسپریس) یونیورسٹی آف چترال میں سنٹر فار ریسرچ اینڈ سیکورٹی اسٹڈیز کے ...


دنیا بھر سے

error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔