پاکستان زندہ باد فٹ بال ٹورنمنٹ کا فائنل جوٹی لشٹ فٹ بال کلب نے جیت لیا۔ – Chitral Express

Premier Chitrali Woolen Products

پاکستان زندہ باد فٹ بال ٹورنمنٹ کا فائنل جوٹی لشٹ فٹ بال کلب نے جیت لیا۔

چترال (نمائندہ چترال ایکسپریس)پاکستان زندہ باد فٹ بال ٹورنمنٹ کا فائنل ڈگری کالج فٹ بال گراؤنڈ کے مقام پر کھیلا گیاجس میں جوٹی لشٹ فٹ بال کلب نے دروش کی فٹ بال ٹیم کو دو گولوں سے شکست دے کر فائنل اپنے نام کر لیا ۔اس ٹورنمنٹ میں ضلع بھر سے چالیس ٖفٹ بال کی ٹیموں نے حصہ لیا تھا۔پی ٹی آئی چترال کے رہنما شہزادہ امان الرحمان اس میچ کے مہمان خصوصی کے فرائض انجام دینے تھے جن کی غیر موجودگی کی وجہ پر پی ٹی آئی کے سینئر رہنما عبد الرازق نے یہ فرائض سر انجام دئیے۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ عمران خان کی خصوصی ہدائیت پرچترال کے مختلف علاقوں میں فٹبال گراؤنڈز کی تعمیر کا کام جاری ہے۔اسی طرح یوتھ کمپلیکس بھی تعمیر کے آخری مراحل میں داخل ہوگیا ہے ،بہت جلد اس کا افتتاح کر کے نوجوانوں کے لئے اسے کھول دیا جائے گا ۔انہوں نے کمانڈنٹ چترال سکاؤٹس،گورنمنٹ ڈگری کالج چترال کے پرنسپل ،فٹبال انتظامیہ کے فاروق اعظم اور تمام ٹیموں کاشکریہ ادا کیا کہ انہوں نے عوام چترال کے لئے تفریح کا موقع فراہم کیا۔بعد ازاں انہوں نے جیتنے والی ٹیموں میں انعامات تقسیم کی ۔ٹورنمنٹ کا کپ جوٹی لشٹ فٹ بال کلب اور رنرز اپ کی ٹرافی دروش ٹیم کو دی گئی۔مین آف دے ٹورنمنٹ کا انعام دروش ٹیم کے حسن سید کو دیا گیا۔انہوں نے شہزادہ امان الرحمان کی طرف سے جیتنے والی ٹیم جوٹی لشٹ کو پچیس ہزار روپے اور دوسری پوزیشن حاصل کرنے والی ٹیم دروش کوپندرہ ہزار روپے اور فٹ بال انتظامیہ کوپچاس ہزار روپے نقد انعام کا اعلان بھی کیا۔جیتنے والی ٹیم اور رنرز اپ کی ٹیموں نے ڈھول کی تھاپ پر چترالی ڈانس کا مظاہرہ بھی پیش کیا ۔پاکستان زندہ باد کے نعروں کی گونج میں اس ٹورنمنٹ کا اختتام ہوا۔جس کے بعد جیتنے والی ٹیم کو سینکڑوں گاڑیوں کے جلوس میں ان کے گاؤں جوٹی لشٹ پہنچایا گیا۔جہاں جیت کو سیلبریٹ کیا گیا۔
اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
دوسروں کے ساتھ اشتراک کریں

یہ خبر بھی پڑھیں

’’پرتشدد انتہا پسندی کی روک تھام‘‘کے موضوع کے حوالے سے یونیورسٹی آف چترال میں ورکشاپ کا انعقاد

چترال (نمائندہ چترال ایکسپریس) یونیورسٹی آف چترال میں سنٹر فار ریسرچ اینڈ سیکورٹی اسٹڈیز کے ...


دنیا بھر سے

error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔