تازہ ترین

غلطیوں کو چھپانے کے لیے جلد بازی میں تحصیل کونسل دروش کی بجٹ پاس کرنے کی کوشش کی گئی ۔قاضی قسور اللہ قریشی

دروش(نمائندہ چترال ایکسپریس) ۔قاضی قسور اللہ قریشی ممبر تحصیل کونسل چترال دورش 2 نے ایک اخباری بیان میں کہا ہے کہ تحصیل کونسل دروش کابجٹ اجلاس آج بھی ٹی،ایم،اے آفس دورش میں جاری رہا۔ جس کی صدارت اسپیکر خان حیات اللّٰہ خان کی۔ اس اجلاس میں تحصیل ناظم چترال محمد الیاس نے بجٹ پیش کیا۔ اُنہوں نے کہا کہ آج جب بجٹ اجلاس پر بحث شروع ہوا۔ تو دورش سے تعلق رکھنے والے کل چھ ممبران میں سے چار ممبر اجلاس میں موجود تھے۔ ممبر تحصیل کونسل چترال قاضی قسور اللّٰہ قریشی نے اس بجٹ کو یکسر مسترد کرتے ہوئے کہا اے، ڈی، پی17- 2016 اور 18 -2017 میں تحصیل کونسل کے پیسوں کو غیر قانونی طریقے سے ڈسٹرکٹ کونسل کے پیسوں میں ڈال کر خورد برد کیے گئے ہیں۔ اور بعد میں صرف کاغذی کاروائی ہوئی ہے۔ جس میں پورے تحصیل دورش کا حصہ تھا۔اُنہوں نے کہا کہ اس اجلاس میں جماعت اسلامی کے ممبرز عبدالسلام، شیرنذیر اورروئداد احمد بجٹ کے حق میں رہے اور صرف ان تین ممبران سے بجٹ پاس کرنے کی کوشش کی گئ جو کہ اپنے سابقہ ناکامیوں اور دوسرے معاملات پر پردہ ڈالنے کی ناکام کوشش ہے اس کے علاوہ 18-2017 کے اے، ڈی، پی میں کروڑوں روپوں کے فنڈزکرپشن ہوئی ہیں۔ اور ان فنڈز پر بھی صرف کاغذی کارروائی ہوئی ہے۔
قاضی قسور اٰللہ نےوزیر اعلیٰ خیبر پختونخواہ،سیکریٹری بلدیات، سیکریٹری لوکل کونسل بورڈ، کمشنر ملاکنڈ ڈویژن،اور ڈپٹی کمشنر چترال سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ  تحصیل کونسل سے ان فنڈز کے بارے میں انکوائری کی جائے۔ کیونکہ اس میں بہت خورد برد ہوئی ہے۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
دوسروں کے ساتھ اشتراک کریں

متعلقہ خبریں/ مضامین

error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔
إغلاق