شیر جہان ساحل – Chitral Express

شیر جہان ساحل

لاوارث چترال ۔۔۔۔

پامال نہ ہوجائے ستاروں کی آبرو۔۔۔۔۔ اے میرے خوش خرم ذرا آنکھ توملائو 19 سال بعد جب ملک میں مردم شماری، خانہ شماری کا فیصلہ کیا گیا تو چترال کے سب لوگ اس خیال میں تھے کہ چترال کی آبادی دگنی ہوگی اور آبادی کے حساب سے چترال کے لئے ...

مزید پڑھئے

چترالی ثقافت کی تباہی چترالی خواتین کے ہاتھوں

ادارے کا مراسلہ نگار سے متفق ہونا ضروری نہیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ایڈیٹر۔۔۔۔۔ پچھلے دنوں ایک مضمون  جو چترالی خواتین  کی سیاسی سرگرمیا ں اور چترالی ثقافت کی تباہی کے حوالے سے لکھی گئی تھی۔ یہ مضمون  سوشل میڈیا    پر اپلوڈ ہوتے ہی چترال سے تعلق رکھنے والے سوشل میڈیا کے غیر ذمہ دار  ...

مزید پڑھئے

پبلک سروس کمیشن کےآگے…ہم واقعی میں لاوارث ہیں۔۔۔۔   

خلیفہ ثانی حضرت عمر فارق رضی اللہ تعالی عنہ فرمایا کرتے تھے  کہ اگرفرات کے کنارے کوئی کتا بھی بھوکا پیاسا مرگئے تو قیامت کے دن عمر سے پوچھا جائے گا۔ کہاں وہ اسلامی حکمران اور کہاں آج کا اسلامی جمہوریہ پاکستان!!! مملکت خداداد میں ہونے والے مظالم اور ناانصافیوں ...

مزید پڑھئے

این۔ٹی۔ایس عملے کی ہٹ دھرمی  اور نوجوانون کا مستقبل

urنادرا سن 2000ء میں قائم شدہ پاکستان کاایک خودمختار ادارہ ہے جسے رجسٹریشن کی ذمہ داری سونپ دی گئی ہے۔ ملک کے  کونے کونے میں موجود سیکورٹی چیک پوسٹ ہوں یا کوئی ہائی الرٹ سیکورٹی زون، وہاں داخلے کے لئے آپ کے پاس نادرا کا بنا ہوا کارڈ ہونا چائیے ...

مزید پڑھئے

زیب قرطاس۔۔۔منافق۔

انسان کسی بھی مسئلے پر اپنا ایک خاص موقف رکھتا ہے۔ اگر موقف میں کوئی فرق آئے تو انسانی صفات متاثر ہوتی ہے۔ انسانی صفات کو جاننے کے لئے مولانا  کوثر  نیازی  سادہ سی  مثال بیان کرکے ایک واقعہ کا ذکر یوں کرتے ہیں”  کہ ایک جگہ پر بجلی گھر ...

مزید پڑھئے

زندہ قوم کے مفاد پرست رہنما 

یہ باجوڑ خار کا واقعہ  ہے جہاں عصر کے بعد گراونڈ میں کھیل کود مغرب  تک جاری  رہتا ہے ۔عصر کی نماز پڑھ کر لوگ مسجد سے باہر آرہے تھے۔ گراونڈ میں کرکٹ میچ چل رہا تھا ، مشیران تماشا دیکھ رہے تھے اس دوران بندوق فائز  کی آواز سنی ...

مزید پڑھئے

زینب کے اصل قاتل ہم ہیں

پوری قوم سراپا احتجاج ہے، انسانیت کا سر شرم سے جھک گئی، حوا کی بیٹی کی پھر سے تذلیل، معصوم پری درندگی کا شکار،بے حس اور کٹ پتلی انتظامیہ بے بس، قصور واقعہ شریفوں کے منہ پر تماچہ ہے وغیرہ ، یہ وہ الفاظ ہیں جو ہماری میڈیا کی سرخیان ...

مزید پڑھئے

گولین گول کا میگا پروجیکٹ بھی ناکامی سے دو چار ، آخر وجہ کیا ہے

چترال سے ۴۵ کلومیٹر کے فاصلے پر بننے والے گولین گول ہائیڈرو پاور پروجیکٹ کا باقاعدہ آغاز جنوری ۲۰۱۱ ء میں ہوا تھا اور جنوری ۲۰۱۷ ء کو افتتاح ہونا تھا۔ یہ پروجیکٹ اہالیان چترال کے لئے امید کی ایک کرن بن گئی تھی اور اہالیان چترال اس امید سے ...

مزید پڑھئے

میں بھی ایک انتہا پسند ہوا کرتا تھا

ہمارے معاشرے میں روشن خیال طبقے کا یہ خیال ہے کہ انتہاپسندی ایک ناسور ہے اور ہمارے معاشرے میں اسکا ذمہ دار ہمارے مدارس ہیں جہاں بچوں کو انتہاپسندی کی تعلیم دی جاتی ہے اور ملک میں انتہاپسندی بڑھ جاتی ہے اور ان انتہاپسندوں کو دہشت گرد باآسانی اپنے پلید ...

مزید پڑھئے

ایم۔این۔اے صاحب، اب روشنی نہیں آپکا ایک احسان درکار ہے۔

محترم ایم این اے جناب افتخار الدین صاحب کا کہنا ہے کہ اگر سب ڈویژن مستوج کو گولنگول ہائیڈرو پاور پروجیکٹ سے بجلی نہ دی گئی تو اسکا ذمہ دار پیڈو اور صوبائی حکومت ہو گی۔ مگر جناب عالی اگر یہ بات کنفرم ہی نہیں تھی کہ سب ڈویژن کو ...

مزید پڑھئے