کمرشل اشتہارات/ اعلانات
صفحہ اول | تازہ ترین | یوم دفاع کے حوالے سے چترال سکاؤٹس ہیڈکوارٹر میں تقریب کا انعقاد

یوم دفاع کے حوالے سے چترال سکاؤٹس ہیڈکوارٹر میں تقریب کا انعقاد

چترال(نمائندہ چترال ایکسپریس) یوم دفاع کے حوالے سے چترال میں سب سے بڑی تقریب چترال سکاؤٹس ہیڈ کوارٹر چترال میں منعقد ہوئی ۔ کمانڈنٹ چترال سکاؤٹس بریگیڈیر نعیم اقبال مہمان خصوصی تھے ۔ دیگر شرکاء میں چترال سکاؤٹس کے نئے کمانڈنٹ کرنل نظام الدین ، ضلع ناظم مغفرت شاہ ، ایم پی اے سلیم خان، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر عبدالغفار ، کرنل محمودالحسن، ڈی پی او عبدالمجید مروت فوجی اور سول آفیسران ، سیاسی قائدین ،ڈسٹرکٹ بار اور دیگر غیر سرکاری اداروں کے نمایندگان ،سکولوں کے بچے اور خواتین شامل تھیں ۔ کمانڈنٹ چترال سکاؤٹس ، ایم پی اے سلیم خان ، ڈی پی او چترال،سپاہی ناصر شہید کے والد اور ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر چترال عبدالغفار نے یادگار شہدا پر پھول چڑھائے اور فاتحہ خوانی کی ۔ تقریب میں کھڑے ہو کر ایک منٹ کی خاموشی اختیار کی گئی ۔ اس موقع پر یادگار دھنوں پر ملی نغمے اور1965کی جنگ سے متعلق معروف گیت پیش کئے گئے ۔سکول کے بچوں نے پاکستان کے جھنڈے کے لباس میں اور آرمی کے یونیفارم میں مختلف خاکے اور ٹیبلو پیش کئے ۔ اور دفاع وطن کیلئے اپنے جذبات کا اظہار کیا ۔ پاکستان کی سالمیت ، بقا کیلئے پاک فوج کی قربانیوں کا ذکرکرتے ہوئے انہیں شاندار الفاظ میں خراج تحسین پیش کیا ۔ تقریب میں حال ہی میں شہید ہونے والے کیپٹین محمد اجمل کے چچا یار محمد نے اُن کی شہادت کے آرزووں پر تفصیل سے روشنی ڈالی ۔اور کہا ۔ کہ محمد اجمل میں سیاچین میں فرائض منصبی انجام دینے کے دوران ملک پر جان قربان کرنے اور شہادت کی آرزو کا غلبہ پیدا ہوا ۔ جس نے بالاخر نوجوان کیپٹن کو اس عظیم منصب سے سرفراز کیا ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ ہم اس دھرتی پر اجمل جیسے ہزاروں سپوت قربان کرنے کیلئے تیار ہیں ۔ اور اجمل کی شہادت نے ہمارے خاندان کو بہت بڑی عزت دی ہے ۔ کمانڈنٹ چترال سکاؤٹس بریگیڈئر نعیم اقبال نے پاک فوج اور چترال سکاؤٹس کی قربانیوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا ۔ کہ 1965کی جنگ میں فوج اور عوام ایک ہی صف میں ایک دوسرے کے شانہ بشانہ کھڑے ہوکر دشمن کا مقابلہ کیا ۔اور کامیابی حاصل کی ۔ آج بھی فوج ،حکومت اور عوام مل کر دہشت گردوں کا مقا بلہ کر رہے ہیں ۔او ر فوج حکومت اور عوام کا یہ اتحاد مملکت خداداد پاکستان کے دشمنوں کو صفایا کرنے میں اہم کردار ادا کرے گا ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ آج بھی 1965کا جذبہ عود کر آیا ہے ۔ اور ہمارے دشمن کو ہمارے جذبے کا احساس ہے ۔ اُن کو یہ بات معلوم ہے ۔ کہ پاکستان کا ہر جوان اور ہر نوجوان میجر عزیز بھٹی بننا چا ہتا ہے ۔ اور اپنی جان ملک کیلئے ٹینکوں کے نیچے قربان کرنا چاہتا ہے ۔ اس لئے اس کو مختلف قسم کے شر انگیزی کے ذریعے مصروف رکھنے کی کو شش کرتا ہے ۔ تقریب کے آخر میں جنرل راحیل شریف کا پیغام پڑھ کر سنایا گیا ۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

یہ خبر بھی پڑھیں

دھڑکنوں کی زبان ……کیا اس محفل میں بھی ہماری باتیں ہوتی ہیں؟

کیا اے سی لگے کمرے میں بیٹھے ہوئے بڑے بڑے تعلیم یافتہ اور ڈگری یافتہ …

اترك تعليقاً