fbpx
تازہ ترین

ایجوکیشن انسٹیٹیوٹ برائے خصوصی بچے چترال میں خصوصی بچوں میں امدادی چیک تقسیم کی تقریب

چترال (نمائندہ چترال ایکسپریس) اسپیشل ایجوکیشن انسٹیٹیوٹ برائے خصوصی بچے چترال میں خصوصی بچوں میں امدادی چیک تقسیم کرنے کے سلسلے میں ایک خصوصی تقریب کا اہتمام کیا گیا۔تقریب کے مہمان خصوصی خاتون ممبر صوبائی اسمبلی فوزیہ بی بی تھی۔ جبکہ صدرمحفل پی۔ٹی۔آئی کے ضلعی کنونئر اور ممبر ڈسٹرکٹ کونسل چترال حاجی رحمت غازی خان تھے۔تقریب میں پی۔ٹی۔آئی کے سابق ضلعی صدر ممبر ضلع کونسل چترال عبدا للطیف ،پی ٹے اے کے صدر میاں محبوب علی شاہ کاکاخیل،سید شمس النظر فاظمی،بچوں کے والدین اورمعززین علاقہ کی کثیر تعداد موجودتھی۔ سوشل ویلفیئر آفیسر بونی تاج ا لدین جگر نے اسٹیج سکریٹری کے فرائض انجام دیئے۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ادارہ خصوصی تعلیم چترال کے انچارچ سیّد نبی حسین نے ادارے کی سرگرمیوں اور خصوصی بچوں کی تعلیم و تربیت کے حوالے سے خطاب کیا۔ انہوں نے موجودہ حکومت کی طرف سے ادارے کو فراہم کی گئی گاڑی، فرنیچر اور بچوں کوامدادی رقم کی فراہمی پر پی۔ٹی۔ آئی حکومت کی تعریف کی۔ اور ادارے کے ساتھ تعاؤن جاری رکھنے پر خاتون ایم۔پی۔اے کا شکریہ ادا کیا۔انہوں نے چترال میں اسپیشل ایجوکیشن کمپلیکس کی تعمیرکی ضرورت پر زور دیا۔ایم۔پی۔اے چترال فوزیہ بی بی نے ادارے کی کارکردگی پر اطمنان کا اظہار کیا۔اور ادارے میں خصوصی بچوں کی تعلیم و تر بیت کی بے حد تعریف کی۔اور خاص طور پر خصوصی بچوں کی تربیت کے سلسلے میں اساتذہ کے کردار کو سراہا۔انہوں نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے اسپیشل ایجوکیشن کمپلیکس کی تعمیر کی تجویز کو مناسب قرار دیتے ہوئے اگلے مالی سال میں اس کی تعمیر کے لئے فنڈز کی فراہمی کو یقینی بنانے کا وعدہ کیا۔انہوں نے کہاکہ پاکستان تحریک انصاف خصوصی بچوں کی تربیت اوربحالی کی ہرممکن کوشش کررہی ہے۔انہوں نے مزیدکہاکہ خیبرپختونخوامیں معذوربچوں کے کل 39تربیتی ادارے اورچارفیمل نابیناسینٹرموجودہے جو24اضلاع کے لئے نہ ہونے کے برابرہے ہم حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ ان خصوصی بچوں اور بچیوں کے لئے مختلف علاقوں میں تربیتی سینٹرز کاقیام یقینی بنایاجائے۔اور ادارے سے منسلک دیگر مسائل حل کرنے کی یقین دہانی کرے۔صدر محفل نے اپنے صدارتی خطاب میں خصوصی بچوں کے اس ادارے کو مزید فعال کرنے پر زور دیا۔ اور ادارے کے ساتھ ہر قسم کے تعاؤن کا یقین دلایاپروگرام کے آخر میں مہمان خصوصی اور دیگر مہمانان نے خصوصی 39طلباء اورطالبات میں3000روپے کے حساب سے کل 1,17000روپے کے چیک تقسیم کئے۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

متعلقہ خبریں/ مضامین

اترك تعليقاً

error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔
إغلاق