fbpx
تازہ ترین

نمایاں پوزیشن حاصل کرنے والے طلباء و طالبات میں ٹیلنٹ ایوارڈ کی تقسیم کا تقریب منعقد کیا گیا۔

چترال(نمائندہ چترال ایکسپریس) چترال کے بالائی علاقے ریشن کے گورنمنٹ ہائی سکول میں ٹیلنٹ ایوارڈ کی تقسیم کا تقریب منعقد کیا گیا جس کا اہتمام یوتھ کلب ریشن اور باچا خان ٹرسٹ نے کیا تھا۔ اس موقع پر یونین کونسل چرون کے ناظم اور پاکستان تحریک انصاف کے کنوئینر رحمت غازی مہمانخصوصی تھے جبکہ تقریب کی صدارت اسسٹنٹ ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر شرف الدین نے کی۔
ٹیلنٹ ایوارڈ کی تقریب میں طلبا و طالبات نے محتلف رنگارنگ پروگرام پیش کئے جس سے حاضرین نے نہایت محظوظ ہوکر ان کو داد دی۔ جن میں قومی رانہ، ملی نغمے، ماں کی احترام کے عنوان پر نظم اور تقاریر بھی شامل تھے۔
تقریب میں مہمان خصوصی اور دیگر ماہرین تعلیم نے پوزیشن ہولڈرز طلبا و طالبات میں انعامات، ایوارڈ تقسیم کئے۔
اس تقریب میں 24 طلبا و طالبات کو ایوارڈ دئے گئے جن میں سر فہرست یہ ہیں۔
سادیہ فرمان دختر فرمان ولی اسلامیہ ماڈل سکول جنہوں نے 1100 میں سے 952 نمبر لئے (952/1100)، انیلہ رضا دختر فرزند احمد خان نے 923 نمبر حاصل کئے تھے، مسرت شاہین دختر سلطان حسین گورنمنٹ گرلز ہائی سکول ریشن کی طالبہ نے 910 نمبر، حافظہ پروین دختر شرف الدین نے 903 نمبر، جنید خالد ولد معرا ج الدین گورنمنٹ ہائی سکول ریشن نے 894 نمبر اور حسینہ زیب دختر نادر خان گورنمنٹ گرلز ہائی سکول ریشن نے 860 نمبر لیکر نمایاں پوزیشن حاصل کی۔حسینہ زیب نے آرٹس گروپ میں پورے صوبے میں ٹاپ کیا جسے وزیر تعلیم نے ڈیڑھ لاکھ روپے نقد انعام بھی دیا۔
اس کے علاوہ اسی علاقے سے پاک فوج میں کمیشن حاصل کرکے کیپٹن سلمان علی، کیپٹن ظہور الہی، اور میڈیکل کالج میں داحلہ لینے والی فریحال سبحانی کو بھی ایوارڈ سے نوازا گیا۔
تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے طلباء پر زور دیا کہ تعلیم کے بغیر کوئی بھی قوم ترقی نہیں کرسکتا۔انہوں نے کہا کہ آج کا دور مقابلے کا دور ہے اور اس میں جو بچہ زیادہ محنت کرے گا وہ کامیاب ہوگا ورنہ کم نمبر لینے والے طلباء کو کہیں بھی داخلہ نہیں ملتا۔
تقریب سے آنیس الرحمان یوتھ کونسلر ریشن، نزیر ولی شاہ صدر یوتھ کلب ریشن ، احمد اللہ پرنسپل گورنمنٹ ہائی سکول ریشن، طاہر خان پرنسپل ثمر قند سکول اینڈ کالج ریشن، اعجاز حقانی پرنسپل اسلامیہ ماڈل سکول، شہزاد منیر ویلیج کونسلر، خواجہ نظام الدین ایڈوکیٹ اور دیگر نے بھی اظہارخیال کیا۔ ٹیلنٹ ایوارڈ کی تقریب میں کثیر تعداد میں طلباء، طالبات، اساتذہ اور علاقے کے عمائدین نے شرکت کی۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

متعلقہ خبریں/ مضامین

اترك تعليقاً

error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔
إغلاق