Chitral Express

Chitral's #1 Online News Website in Urdu | Politics, Sports, Islam

دروش میں پی پی آرپراجیکٹ کی تعاون سے فٹ بال اوررسہ کشی کے ٹورنامنٹ کاآغاز

چترال(نمائندہ چترال ایکسپریس)سرحدرول سپورٹ پروگرام کے زیرنگرانی پی پی آرپراجیکٹ کی تعاون سے فٹ بال اوررسہ کشی کے ٹورنامنٹ کاآغاز ہفتہ کے روزدروش کے فٹ بال گرونڈمیں ہوا۔ٹورنامنٹ میں 18ٹیمیں حصہ لے رہی ہیں ان مقابلوں کااختتام 28اکتوبرہونیوالے فائنل میچ کے ساتھ ہوگا۔ اس حوالے سے افتتاحی تقریب منعقدہوئی جس کے مہمان خصوصی ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر دروش محمدیوسف خان تھے۔اس موقع پرایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنردروش محمدیوسف خان اور ڈی پی ایم سرحدرول سپورٹ پروگرام طارق احمدنے شائقین سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ سرحدرول سپورٹ پروگرام چترال کے پسماندہ اوردورافتادہ علاقوں میں ترقیاتی ،بحالی اوردوسرے بنیادی سہولیات کے حوالے کام کررہاہے جس میں ایجوکیشن اور،ہیلتھ کے کام بھی شامل ہیں ۔پسماندہ ،ناداراورغریب افراد کوتربیتی ورکشاپ کے ساتھ روزگارپیداکرنے کے لئے چھوٹے پیمانے پرکاروبار کے لئے سامان بھی مہیا کئے جاتے ہیں جس سے دروش یوسی ون اوریوسی ٹو میں کافی لوگوں کواپنے پاؤں پر کھڑا ہونے کاموقع ملاہے۔انہوں نے مزیدکہاکہ ہماری زندگی کیلئے کھیل بہت اہمیت کی حامل ہیں اور کھیل انسان میں چستی ،پھرتی ،لچک اور ایسی قائدانہ صلاحیتیں پیدا کرتے ہیں ۔ جوبچہ فزیکل فٹنیس کے اصول سے واقف ہے وہ اپنے آپکو ہر گیم میں ایڈجسٹ کر سکتا ہے کھیل ہمیشہ انفرادی کی بجائے اجتماعی فوائد کی طرف توجہ دلاتا ہے انہوں نے کہا کہ ہم چترال کے بچوں کے صلاحیتوں کو اُجاگر کرنے کے لئے نہ صرف کوشش کریں گے بلکہ ہم اُن کو بھرپور سپورٹ کرینگے اور ان کا ساتھ دینگے ۔ اس موقع پرممبرڈسٹرکٹ کونسل یویسی دروش شہزادہ خالدپرویز،آئی ڈی منیجرپی پی آرصلاح الدین صالح،پاکستان تحریک انصاف کے رہنما رضیت باللہ،سیف اللہ جان،پروگرام آفیسرپی پی آردروش عبادالرحمن،ایس ایس اوفخرالدین،تاج محمد اورعمائدین موجود تھے۔قبل ازین جب ٹورنامنٹ کا افتتاح کیا گیا ۔ تو فٹ بال گراؤنڈ میں سینکڑوں تماشائی موجود تھے ۔ اس موقع پر کبوتر اور غبارے ہوا میں چھوڑے گئے ۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

اترك تعليقاً

Copyright © All rights reserved. | Newsphere by AF themes.
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔