ڈی ایچ او آفس چترال میں ماں اور بچے کی صحت کا ہفتہ کے حوالے سے کیے جانے والے انتظامات کا جائزہ – Chitral Express

کمرشل اشتہارات/ اعلانات

صفحہ اول | تازہ ترین | ڈی ایچ او آفس چترال میں ماں اور بچے کی صحت کا ہفتہ کے حوالے سے کیے جانے والے انتظامات کا جائزہ

ڈی ایچ او آفس چترال میں ماں اور بچے کی صحت کا ہفتہ کے حوالے سے کیے جانے والے انتظامات کا جائزہ

چترال(نمائندہ چترال ایکسپریس)ڈی ایچ اوچترال ڈاکٹرافتخارالدین اورریجنل پروگرام منیجرآغاخان ہیلتھ سروس چترال معراج الدین نے کہاہے کہ ماں اوربچے کی صحت کاہفتہ 18سے 25فروری تک منانے کامقصدماں اوربچے کی صحت کویقینی بناناہے ۔انہوں نے تمام متعلقہ محکموں کے افسران کو ہدایت کی کہ ماں او ربچے کی صحت کے حوالے سے منا ئے جانے والے ہفتے کو کامیاب بنانے کے لیے اپنی ذمہ داریاں پوری امانت داری کے ساتھ نبھائیں۔اُنہوں نے کہا کہ اس ہفتے کے دوران لیڈ ی ہیلتھ ورکرز خواتین دیہی مراکز اور گھر گھر جاکر حاملہ خواتین اور چھ ما ہ سے لے کر پانچ سال تک کی عمر کے بچوں کی بنیادی غذائیت کے بارے میں آگاہی اور مختلف بیماریوں سے بچاؤ کی ادویات فراہم کریں گی۔ ان خیالا ت کا اظہار انہوں نے اپنے دفتر میں ماں اور بچے کی صحت کا ہفتہ کے حوالے سے کیے جانے والے انتظامات کا جائزہ لیتے ہوئے کیا۔مہمان خصوصی ڈسٹرکٹ خطیب مولانافضل مولانے اس موقع پر کہا کہ بچوں میں بنیادی غذا کی کمی کی وجہ سے وہ دنیا میں آنے سے پہلے ہی ان کی موت واقع ہو جاتی ہے۔ بچوں کا مربوط ہفتہ صحت و صفائی ، غذائیت اور حفظان صحت کے بہتر اصولوں پر عمل کا معیار بہتر بنا کر بچوں کی زندگیاں بچانے اور ان کی نشو ونما کے لیے ایک ماڈل فراہم کرتاہے۔انہوں نے کہا کہ ماں او ربچے کی صحت کا ہفتہ کے بارے میں عوام میں شعور اُجاگر کرنا وقت کی اہم ضرورت ہے۔ڈسٹرکٹ کواڈینٹرایل ایچ ڈبلیونسیم بی بی اورسپروائززہدہ نے کہاکہ اس مہم کے دوران ضلع بھرمیں دوسال سے پانچ سال تک عمر کے تقربیاً45ہزازبچوں کو پیٹ کے کیڑوں کی ادویات دی جائیں گی اورپندرہ سوکے قریب حاملہ خواتین کو تشنج سے بچاؤ کے انجکشن لگائے جائیں گے۔ اس سلسلے میں ہمارے اسٹاف شہری اور دیہی علاقوں میں گھر گھر جاکر خواتین کو آگاہی فراہم کریں گی اور بچوں کو حفاظتی ٹیکے اور پیٹ کے کیڑوں کی ادویات دی جائیں گی انہوں نے کہا کہ مہم کے دوران ماؤں کو اس بات کی طرف قائل کیا جائے گا کہ وہ بچوں کو دودھ پلاتے وقت صفائی کا خاص خیال رکھیں اور اپنے جسم سمیت کپڑوں کو صاف رکھیں انہوں نے کہا کہ دودھ پلانے والی مائیں اگر صفائی کا خاص خیال رکھیں تو بچوں کی اموات میں کمی واقع ہوسکتی ہے۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
دوسروں کے ساتھ اشتراک کریں

یہ خبر بھی پڑھیں

ایم این اے اور ایم پی اے چترال24گھنٹے کے اندر کیلاش کمیونٹی کے خلاف اپنے الفاظ واپس لیں۔ورنہ ان کے خلاف ایف آئی آر درج کرائی جائیگی۔پی ٹی آئی رہنماؤں کی پریس کانفرنس

چترال (نمائندہ چترال ایکسپریس)پاکستان تحریک انصاف ضلع چترال کے صدر عبداللطیف نے چترال کی ترقی،امن ...


دنیا بھر سے

error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔