fbpx

Chitral Express

Chitral's #1 Online News Website in Urdu | Politics, Sports, Islam

اوسیک کاؤگول نالے کی جلد سے جلد صفائی کرکے پروٹیکشن والز تعمیر کیے جائیں۔وی سی ناظم عمران الملک

دروش(نمائندہ چترال ایکسپریس)ویلج ناظم جنجیریت عمران الملک  نے ایک اخباری بیان مییں کہا ہے کہ گزشتہ سال یعنی اگست 2018 عیدالاضحی کے پہلے دن اوسیک نالے میں زبردست سیلابی ریلہ آنے کی وجہ سے اکیس گھر تباہ اور بہت سے گھر متاثر ہوئے تھے تاہم اللہ کا بڑا کرم رہا کہ جانی نقصانات نہیں ہوئے۔مشکل کی گھڑی میں بہت سے حکومتی اداروں اور این جی اوز نے آکر متاثرین کی امداد کے ساتھ ساتھ انفرااسٹرکچر کی بحالی میں مدد کا وعدہ کیا لیکن ابتک بعض اہم مسائل جوں کے توں حل طلب پڑے ہیں اُنہوں نے کہا کہ اس موقع پر کمشنر ملاکنڈ ڈویژن بھی تشریف لائے تھے اور ہم نے ان کے سامنے چند اہم مطالبات رکھے جن میں 1 اوسیک کاوگول نالے کی چنیلائزیشن و حفاظتی بند کی تعمیر 2 جنجریت تا اوسیک ڈومشغور ایریگیشن چینل کی بحالی و پختگی 3 ڈومشغور نالے کی صفائی 4 جنجریت گول کی صفائی 5اوسیک ڈومشغور واٹر سپلائی اسکیم کی بحالی کمشنر نے ہمارے مطالبات کو مانتے ہوئے ان پر فوری اقدامات کرنے کی یقین دہانی کی تھی پر افسوس کہ ابتک کوئی پیش رفت نہیں ہوئی۔اُنہوں نے کہا کہ سب سے اہم اور فوری حل طلب مسلہ کاوگول نالے کی صفائی ہے کیونکہ گزشتہ سال کے سیلاب کی وجہ سے نالہ ملبے سے بھر چکا ہے اور اس کا رخ بھی آبادی کی طرف ہوچکا ہے اگر اس سال اپریل تک اس کی چینلائزیشن اورپروٹیکشن والز تعمیر نہ کیے گئے تو خدشہ ہے کہ اب معمولی بارشیں بھی تباہی کا سبب بن سکتی ہیں اُنہوں نے اہلیان اوسیک  کی طرف سےضلعی انتظامیہ کمشنر ملاکنڈ پی ڈی ایم اے اور صوبائی و قومی اسمبلی کے نمائندگان سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ اوسیک کاؤگول نالے کی جلد سے جلد صفائی کیا جائے اور پروٹیکشن والز تعمیر کیے جائیں بصورت دیگر کسی بھی ناخوشگوار واقعے کی زمہ داری ان پر عائد ہوگی

 

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
Copyright © All rights reserved. | Newsphere by AF themes.
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔