fbpx
تازہ ترین

چترال کے یوٹیلیٹی سٹورز میں گذشتہ ایک سال سےاشیاء خووردنوش ناپید،چینی،گھی اور آٹاغائب،عوامی حلقوں رمضان پیکیج فراہم کرنے کا مطالبہ

چترال(نمائندہ چترال ایکسپریس)گزشتہ ایک سال سے یوٹیلیٹی سٹورز چترال میں اشیائے خوردنوش ناپید ہیں۔چینی گھی،بیسن،آٹا اور دالیں دستیاب نہ ہونے کی وجہ سے صارفین بازار سے مہنگے داموں اشائے خوردنوش خریدنے پر مجبور ہوگئے ہیں۔حکومت نے رمضان کے لئے 2ارب روپے کے پیکیج کا اعلان کیا ہے مگر یوٹیلیٹی سٹورز چترال تاحال ان سامان سے خالی ہیں۔دوسری طرف ملک کے دیگر ریجن کی طرح چترال کے سٹورز بھی بند ہیں اور ملازمین اسلام آباد میں یکم مئی سے اپنے مطالبات کے لئے سراپا احتجاج ہیں۔چونکہ چترال میں اشیائے صرف اور خصوصاً معیاری اشیاء عام مارکیٹ میں عدم دستیاب ہیں اور اگر رمضان المبارک میں یوٹیلٹی سٹورز میں اشیاء صرف دستیاب نہ ہو توروزہ داروں کے لئے بہت مشکل ہوگا۔عوامی حلقوں نے یوٹیلیٹی سٹورز کے ملازمین کا مسئلہ حل کرنے اور تمام اسٹوروں پر خاص کرکے رمضان ایٹمز جن کا حکومت نے اعلان کررکھا ہے فراہم کرنے کا مطالبہ کیاہے۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

متعلقہ خبریں/ مضامین

error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔
إغلاق