fbpx

 پھرگام لاسپورمیں پبلک ہیلتھ کے زیر نگرانی تعمیر شدہ واٹرٹیکینی کی ملازمت میں دھوکہ دہی کا نوٹس لیا جائے۔مینہ گل

چترال ( محکم الدین ) رامان لاسپور کے رہائشی مینہ گل نے وزیر اعلی خیبر پختونخوا اور محکمہ پبلک ہیلتھ کے صوبائی حکام سے اپیل کی ہے ۔ کہ پھرگام لاسپور میں قوم ڈانذے کی زمین پر پبلک ہیلتھ کے زیر نگرانی تعمیر شدہ واٹر ٹینکی کی ملازمت کو دھوکا دہی اور اقربا ء پروری کا شکار ہونے کا نوٹس لیا جائے ۔اپنے جملہ دستاویزات کے ساتھ اخباری بیان میں انہوں نے کہا ۔ کہ رامان لاسپور میں قوم ڈانذے کی زمین پر تعمیر شدہ واٹر ٹینکی کی ملازمت کیلئے برادری کے تمام لوگوں نے اُن کے بیٹے نیت گُل کے نام پر اتفاق کیا ہے ۔اور تحریری طور پر اپنے فیصلے سے محکمہ پبلک ہیلتھ کو آگاہ کرتے ہوئے اُنہیں ملازمت دینے کا مطالبہ کیا ہے ۔ لیکن محکمہ ہذا کے ایک اہلکار نے اپنا ذاتی تعلق استعمال کرتے ہوئے اقرباء پروری کی بنیاد پر یہ ملازمت نیت گُل کو دینے کی بجائے اپنے بہنوئی وورگلاب ولد کبیر خان کو دلوایا ہے۔جن کا ٹینکی کی زمین سے دور کا بھی واسطہ نہیں ہے ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ اس حوالے سے قوم ڈا نذے کے افراد نے متفقہ طور پر ایک تحریری قرارد ادمتعلقہ ادارے کو بھیج دی ہے ۔ جس میں انہوں نے مذکورہ ملازمت دھوکا دہی اور اقرباء پروری سے دوسرے فرد کو دینے کی پُر زور مذمت کی ہے ۔ اور خبر دار کیا ہے ۔ کہ اس پر اگر محکمہ پبلک ہیلتھ کے حکام نظر ثانی نہیں کریں گے ۔ تو وہ اپنے زمینات سے گزرنے والے تمام پائپ اُکھاڑ دیں گے ۔ اور ٹینکی گرا دی جائے گی ۔ جس کے نتیجے میں گاوں پھورت اور پھرگام کے پینے کے پانی سے محرومی اور کشیدہ حالات کی تمام تر ذمہ داری متعلقہ ادارہ اوراہلکار پرعائد ہوگی ۔ اُنہوں نے مطالبہ کیا ۔ کہ حالات کشیدہ صورت اختیار کرنے سے پہلے اس پر نظر ثانی کرکے میرے بیٹے نیت گل کو یہ ملازمت دی جائے ۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

متعلقہ خبریں/ مضامین

إغلاق