fbpx

صوبے کے دوسرے حصوں کی طرح چترال، بونی اور دروش میں بھی مکمل شٹر ڈاؤن ہڑتال

چترال(نمائندہ چترال ایکسپریس) صوبے کے دوسرے حصوں کی طرح  لوئر چترال اوراپر چترال کے تاجر برادری نے بھی ناجائز سیلز ٹیکسز کے خلاف شٹر ڈاؤن ہڑتال کیا ۔اس شٹر ڈاؤن ہڑتال کی کال خیبر پختونخواہ کے تاجر برادری نے دی تھی ۔لوئر بازار میں دنین ،شاہی بازار،نیو بازار،بائی پاس،اتالیق بازار وغیرہ،دروش کے بازار اور اپر چترال کے ضلعی ہیڈ کوارٹر بونی کا مین بازار مکمل بند رہا۔لوئر چترال میں شٹرڈاون کا فیصلہ تجار یونین نے کیا جس کی مسلم لیگ ن سمیت دیگر سیاسی پارٹیوں نے بھرپور ساتھ دیا۔ بونی میں اس شٹر ڈاؤن کا فیصلہ   بونی بازار کے صدر  رحیم خان نے دیا تھا ، اس موقع پر تجار برادری نے پورے بونی بازار میں احتجاجی واک کیا جو کہ بونی چوک پہنچ کر جلسے کی شکل اختیار کر لی ۔ جلسے سے خطاب کرتے ہوئے مقریرین نے حکومت کی  جانب سے عائد کردہ سیلز ٹیکس کو یکسر مسترد کر دیا ۔ مقریرین کا کہنا تھا کہ حکومت کی جانب سے عائد کردہ ان  ظالمانہ ٹیکسوں کی وجہ سے آنے والی مہنگائی کے طوفان نے عوام کی کمر توڑ دی ہے جو کسی بھی صورت قابل قبول نہیں۔ مقررین میں تجار یونین کے صدر رحیم خان، محمد شفیع ، سوشل ورکر رحمت سلام، مختار لال ، ظہیر الدین بابر اور دیگر نے خطاب کرتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ فی الفور سیلز ٹیکسوں  کو واپس لے لیں  بصورت دیگر اس احتجاجی سلسلے کو مزید آگے بھی جاری رکھا جائے گا۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

متعلقہ خبریں/ مضامین

إغلاق