fbpx

حکومتی اداروں اور مجاز افسران کی بے حسی,بونی پل ٹو بازار روڈ کی چھٹی مرتبہ اپنی مدد آپ کے تحت مرمت۔

بونی(نمائندہ چترال ایکسپریس) اتوار 15ستمبر کوتحریک حقوق عوام اپر چترال، تجار یونین، عوام بونی، گولڈن کلب بونی اور دوسرے سماجی اداروں کی طرف سے بونی پل سے بازار روڈ کی چھٹی مرتبہ اپنی مدد آپ کے تحت مرمت کی گئی جس میں عوامی حلقوں نے بڑھ چڑھ کر حصہ لیا۔ روڈ کی مرمت کے بعد عوامی حلقوں کی طرف سے حکومت اور متعلقہ اداروں کو کھل کر تنقید کا نشانہ بنایا گیا۔ یاد رہے کہ اس روڈ اور ڈرینج چینل کا تین سال پہلے ٹینڈر ہوچکا ہے مگر تاحال لوگوں کو زمین کے رقوم کی ادائیگی نہ ہونے کی وجہ سے کام شروع نہیں ہوسکا۔ روڈ پر پانی بہنے کی وجہ سے روڈ کی حالت انتہائی خراب تھی اور کسی بھی وقت بڑے حادثے کا سبب بن سکتی تھی۔ اس روڈ سے روزانہ کی بنیاد پر اپر چترال کے تمام علاقوں سے لوگ ہسپتال اور دوسرے دفتری کاموں کے سلسلے میں بونی آتے ہیں اور روڈ کی ناگفتہ بہ حالت کی وجہ سے ان کو انتہائی مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ یہ مسئلہ تحریک حقوق عوام اپر چترال، تجار یونین اپر چترال اور دوسرے سماجی وسیاسی حلقوں کی جانب سے کئی مرتبہ ارباب اختیار کے سامنے لایا جاچکا ہے لیکن اس سلسلے میں اب تک کوئی مثبت قدم نہیں اٹھایا گیا۔ حکومت اور متعلقہ اداروں کی جانب سے اس مسئلے کو سنجیدہ ہی نہیں لیا جارہا جو کہ انتہائی قابل افسوس اور قابل مذمت ہے۔ حالانکہ اپر چترال کے تمام سرکاری افسران بشمول ڈپٹی کمشنر، اسسٹنٹ کمشنرز اور تمام اداروں کے سربراہان روزانہ اسی روڈ سے گزرتے ہیں لیکن اس مسئلے کے حل میں ان کی خاموشی سمجھ سے بالاتر ہے۔ تحریک حقوق عوام اپر چترال، تجار یونین اپر چترال اور عوامی نمائندگان متعلقہ اداروں سے آخری مرتبہ پرزور مطالبہ کرتے ہیں کہ روڈ اور ڈرینج چینل کی تعمیر کا کام بغیر کسی مزید تاخیر کے شروع کیا جائے بصورت دیگر تحریک حقوق عوام، تجار یونین اپر چترال اور عوامی وسماجی تنظیمات کی طرف سے زبردست احتجاجی مظاہرے کیے جائیں گے اور کسی بھی ناخوشگوار واقعے کی زمہ داری حکومت اور متعلقہ اداروں کی ہوگی۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

0 Reviews

Write a Review

متعلقہ خبریں/ مضامین

إغلاق