fbpx

چترال ٹیکس فری زون ہے یہاں کسی بھی ٹیکس کا اطلاق نہیں ہو تا،سابق کونسلر رستم نیاز کا بجلی بلوں سے ٹیکس فوری طورپر ختم کرنے کا مطالبہ

چترال(نمائندہ چترال ایکسپریس)سابق کونسلر نائبرہوڈ چترال ٹاون رستم نیاز نے چیرمین واپڈا سے پر زور مطالبہ کیا ہے۔ کہ فیول ایڈجسمنٹ کے نام سے بجلی بلوں میں جو اضافی ٹیکس ڈالا گیا ہے۔ اسے فوری طور پرواپس لیا جائے۔ اپنے اخباری بیان میں انہوں نے کہا کہ چترال ٹیکس فری زون ہے یہاں براہ راست کسی بھی ٹیکس کا اطلاق نہیں ہو تا اور چترال کے بجلی بلوں پر فیول ایڈجسمنٹ کا جواز اس لئے نہیں بنتا کہ گولین پاور سٹیشن پانی سے بجلی پیدا کرتا ہے اور ہائیڈل پاور سٹیشن کی بجلی پر فیول ایڈجسمنٹ کس بنا پر وصول کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس مد میں چترال کے غریب عوام سے لاکھوں روپے بلا جواز اضافی وصول کئے جا رہے ہیں۔ جو کہ لوگوں کی جیبوں پر ڈاکہ ڈالنے کے مترادف ہے۔ رستم نیاز نے کہاکہ موجودہ حکومت کے آنے کے بعد ہوشربا مہنگائی نے لوگوں کی زندگی اجیرن کردی دی ہے اور چولہے ٹھنڈے پڑگئے ہیں۔ اب گھروں سے روشنی کی سہولت بھی چھین لی گئی ہے اور معمولی بل پر 300 سے 500 روپے تک فیول ایڈجسمنٹ چارچز وصول کئے جارہے ہیں۔ جو کہ کسی صورت قابل قبول نہیں۔ انہوں نے بجلی بلوں سے یہ ٹیکس فوری طور پر ختم کرنے کا مطالبہ کیا۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

متعلقہ خبریں/ مضامین

error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔
إغلاق