fbpx

چترال سے اسلام آباد جانے والی پی آئی اے کی فلائٹ پی کے 661کے حادثے میں شہید ہونے والوں کی یاد میں تقریبات

چترال (نمائندہ چترال ایکسپریس) 7دسمبر2016ء کوایبٹ آباد کے قریب حویلیاں میں چترال سے اسلام آباد جانے والی پی آئی اے کی فلائٹ پی کے 661کے حادثے میں شہید ہونے والوں کی یاد میں تقریبات منعقدہ ہوئے جبکہ مساجد میں قرآن خوانی اور نماز جمعہ کے اجتماعات میں خصوصی فاتحہ خوانی بھی ہوئی۔ طیارے کے حادثے میں شہید ہونے والے چترال کے مقبول عام ڈپٹی کمشنر اسامہ احمد وڑائچ سے منسوب چترال بونی روڈ پر واقع اُسامہ وڑائچ پارک میں یادگار شہداء پرمنعقد خصوصی تقریب میں ڈپٹی کمشنر چترال نوید احمد اور ڈی پی اووسیم ریاض خان نے پھولوں کا ہار یاد گارپرچڑہائے گئے جبکہ چترال لیوی اورپولیس کے چاق وچوبند دستوں نے سلامی دی۔ اس موقع پر ڈی سی نوید احمد نے مقامی عمائدین سے گفتگوکرتے ہوئے کہاکہ سرکاری افسران کے آنے جانے کا سلسلہ جاری رہتا ہے لیکن چترال کے لوگوں میں اُسامہ شہید کے لئے عزت وتکریم دیکھ کرمحسوس ہوتا ہے کہ اس نے کس انداز میں یہاں کے لوگوں کے مسائل کو حل کرنے کی کوشش کی اوران کی آرام وراحت کے لئے دن رات کام کیااور یہ اعلیٰ مقام انہوں نے لوگوں کی خدمت کے ذریعے حاصل کی۔ انہوں نے کہاکہ اُسامہ شہید کو بہتریں اندازمیں خراج تحسین پیش کرنے کی صورت یہ ہے کہ ہم دوسرے لوگوں کے دکھ کو اپنا دکھ تصورکرکے ان کے مسائل حل کرنے کوشش کریں۔ انہوں نے جہاز کے حادثے کو چترال کی تاریخ میں ایک ناقابل فراموش واقعہ قراردیا جو کہ ہرسال پوری وادی کو سوگوارکرتی رہے گی۔ اسی طرح ژانگ بازار، چیو ڈوک، بکرآباد، دروش، زئیت، بونی،جنالی کوچ، لون، بریپ اورموردیر کے مقامات پر اس سانحے کے شہداء کے مزاروں پر مقامی لوگوں نے فاتحہ خوانی کی اور ان کی یاد میں شمع روشن کئے۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

متعلقہ خبریں/ مضامین

error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔
إغلاق