fbpx

ضلعی چترال کی ضلعی زکواۃ کمیٹی کی چیئرمین شپ کیلئے رسہ کشی بند کی جائے۔سابق ممبر تحصیل کونسل عبدالحق

چترال(نمائندہ چترال ایکسپریس)سابق ممبر تحصیل کونسل چترال جماعت اسلامی یوسی بروز کے امیر عبدالحق نے ایک اخباری بیان میں اس بات پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ نام نہاد انصاف کے علمبردار حکومت میں بھی گذشتہ پندرہ مہینوں سے چترال کیلئے ضلعی زکواۃ کمیٹی کے چیئرمین کا انتخاب نہیں ہوسکا ہے۔جس کی وجہ سے چترال جیسے پسماندہ اور غریب ضلع کا دو کروڑ پچاس لاکھ روپے کا زکواۃفنڈ لپیس ہوچکا ہے جس کی وجہ سے سب سے زیادہ سکولز،کالجز اوریونیورسٹی کے سینکڑوں نادار طلبہ کے علاوہ معاشرے کے کئی یتیم،معذوراور جہیز فنڈ کے مستحق کئی خواتین بھی بُری طرح متاثر ہوئے۔اُنہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت کی غیر سنجیدگی اور نااہلی کا عالم یہ ہے کہ آئے روز سوشل میڈیا پر ٹائیگرز اور انصافی چیئرمین شپ کا ہار ایک دوسرے کے گلے ڈال کر ایک دوسرے کو مٹھائیاں کھلا کر سینکڑوں متاثرہ لوگوں کے زخموں پر نمک پاشی کررہے ہیں۔اُنہوں نے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا اور دوسرے تمام متعلقہ اداروں سے مطالبہ کیا ہے کہ اس سلسلے میں فوری اقدامات اُٹھا کر جلد سے جلد چترال کی ضلعی زکواۃ کمیٹی کو فعال بنایا جائے تاکہ مزید محرومیوں کا خاتمہ ہوجائے۔

Advertisements
اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
إغلاق