fbpx

ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر اپر چترال محمد عرفان الدین کا بونی میڈیکل سنٹر کا دورہ۔

بونی(نمائندہ چترال ایکسپریس)ملک میں کرونا وائریس سے پیدا شدہ حالات اور سنگینی کے پیشِ نظر اپر چترال انتظامیہ بھی متحریک ہوکر حالات کا باریک بینی اور سنجیدگی سی دیکھ رہی ہے اس سلسلے میں جمعرات کے روز اپر چترال میں پیشگی اقدامات کے طور پر مختلف فیصلے کیے گئے۔ ان میں ہوٹل، حجام کی دوکان، بیوٹی پارلر وغیرہ کو5 اپریل تک بند کرنے کی احکامات جاری کر دئیے گئے۔اس سلسلے باقاعدہ دفتری خط کے ذریعے متعلقہ لوگوں کو باخبر کیے گئے۔ تا ہم روزمرہ اشیاء خورد ونوش کی دوکانیں اور میڈیکل سٹورز24 گھنٹے کھلے رکھنے کی ہدایت ہے۔ بعد میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر اپر چترال محمد عرفان الدین،ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر مستوج معظم خان اور تحصیلدار رب نواز بونی میڈیکل سنٹر کا دورہ کرکے حالات اور انتظامات سے آگاہی حاصل کی۔ بونی میڈیکل سنٹر کے انچارچ ڈاکٹر عبدالکریم سے اس سلسلے میں خصوصی میٹنگ کی گئی۔ ڈاکٹر عبد الکریم نے میڈیکل سنٹر بونی میں دستیاب وسائل اور سہولیات کے بارے میں ضلعی انتظامیہ کو آگاہ کیا۔ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر، ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر اور تحصیل دار بی۔ ایم۔ سی وارڈز کی مختصر دورہ کرکے جائزہ لیا۔ اس تسلسل کو برقرار رکھتے ہوئے حفظِ ما تقدم کے طور پر اپر چترال کے بونڈری کھونگیر دیرو بوہت میں مسافروں کے ریکارڈ وغیرہ محفوظ بنانے کے لیے چیک پوسٹ قائم کرنے پر غور کیا گیا۔ اور ابتدائی طور پر پولیس بارڈر فورس کے جوان وہاں تعینات کر دئیے گئے۔ تا کہ روز مرہ کی بنیاد پر ریکارڈ مرتب کرکے ضلعی انتظامیہ اپر چترال کو پیش کی جا سکے اور ساتھ اپر چترال میں قرنطینہ سنٹر قائم کرنے کے تجویز بھی زیرِ غور رہی جو عنقریب عمل میں لائی جائیگی۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

متعلقہ خبریں/ مضامین

error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔
إغلاق