fbpx

درحقیقت(وزیراعظم پاکستان کے نام)

تحریر: ڈاکٹر محمد حکیم۔۔۔۔…..

Advertisements

خدا کے لئے پاکستان کے ایجنسیس میرا یہ پیغام وزیراعظم اور آرمی چیف تک پہنچائیں۔ کہ جو کورونہ وائرس بیماری کا آغاز مملکت پاکستان میں ہوچکا ہے کے مریضوں کے لئے بستی اور آبادیوں سے دور بیابانوں میں کچھ وقت کے لئے ہنگامی بنیادوں پر Isolation عارضی طور پرہسپتال بنائے جائیں۔ اور جو confirmed cases ہیں ان کو وہاں پر شفٹ کیا جائے۔اور وہاں پر کام کرنے والے کارکنان ڈاکٹرز،نرسس،اور پیرا میڈیکس کے لئے مخصوص ڈریس مہیاء کیے جائے۔تاکہ مہلک بیماری سے وہ بھی محفوظ رہیں۔اور دوسروں کے لئے بھی نقصان کا سبب نہ ہوں۔ ورنہ ہم خود بھی اور دوسرے بھی اس بیماری سے محفوظ نہیں رہ سکیں گے۔باقی اپنے لوکل ہسپتالوں کو ایسے مریضوں سے خالی رکھیں۔ جن کا ٹیسٹ پازیٹیؤ آچکا ہے۔
کیونکہ یہ ایسا نازک صورت حال ہے۔ اس کی وجہ سے close contact اور مخلوط طرز زندگی اس بیماری کے پھیلنے کا سبب بننے گا۔اور قوم سے دلی التجا ہے کہ وہ خود رضاکارانہ طور پر اگر اپنے اندر کچھ علامات یعنی خشک کھانسی،زکام،سانس میں شدید دشواری اور تھکاوٹ وغیرہ محسوس کرتے ہیں۔ وہ ضرور اپنے آپ کو کسی کے کہے بے غیر ٹسٹ کے لئے پیش کریں۔اگر ان کا یہ ٹسٹ نیگیٹیو آجاتا ہے۔تو پھر اس کے آس پاس پوری بستی بچ جائے گی۔ورنہ ہمیں بہت ہی دشواریوں کا سامنا کرنا پڑے گا۔مجھے اُمید ہے کہ ہم مختصر عرصے میں یقینا کوئی ایسا اقدام اُٹھائیں گے۔جس سے نہ صرف ہم بلکہ پوری دنیا اس مضر بیماری سے چھٹکارا حاصل کرے گی۔ انشاء اللہ

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
إغلاق