تازہ ترین

سابق ڈی سی امین الحق کے تبادلے سے چترال میں ناانصافیوں کا ازالہ نہیں ہو گا۔ان کے خلاف انکوئری کی جائے۔ورکرز پی ٹی آئی

چترال(نمائندہ چترال ایکسپریس) صدر انصاف سٹوڈنٹ فیڈریشن نذیر احمد نے ایک اخباری بیان میں کہا ہے کہ ہم پی ٹی آئی ورکرز ضلع چترال صوبائی گورنمنٹ اور خصوصاً وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک کا تہہ دل سے مشکور ہیں کہ اُنھوں نے پی ٹی آئی چترال کے ورکرز کی شکایات سننے کے بعد ڈپٹی کمشنر چترال امین الحق کا تبادلہ کیا ۔ جو کہ پچھلے 2 سالوں سے چترال میں مطلق العنان بن کے حکومت کر رہا تھا اور انتظامیہ کو ایک مخصوص جماعت کے تابع بنا کے چترا ل کو مزید پسماندگی کے ساتھ ساتھ کرپشن کا بھی گڑھ بنا چکا تھا۔ ہم وزیر اعلیٰ پرویز خٹک کے علم میں یہ بات لانا چاہتے ہیں کہ موصوف کا صرف تبادلے سے چترال میں ناانصافیوں کا ازالہ نہیں ہو گا بلکہ امین الحق چترال لیویز فورس کی بھر تیوں میں گھپلوں اور کرپشن میں ملوث تھا ۔اس کے خلاف غیر جانبدارانہ اور شفاف انکوائری عمل میں لا کے تمام امیدواروں کے ساتھ ظلم و زیادتی کا ازالہ کیا جا ئے۔ اور اسکے ساتھ ساتھ حالیہ بلدیاتی انتخابات میں مخصوص جماعت کا الہ کار بن کر کرڑوں روپے خرچ کرکے مخالف جماعتوں کو سیاسی طور پر بہت نقصان پہنچایا۔اسلئے موجودہ صوبائی حکومت انکے خلاف با ضابطہ انکوائری کرے۔


اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
مزید دیکھائیں

متعلقہ مواد

اترك تعليقاً

إغلاق