تازہ ترین

میرے دوستوں کے قاتل

۔۔۔۔۔۔۔شان زیشان ایلیاس(ارمی پبلک سکول اینڈ کالج چترال)۔۔۔۔۔۔۔



میرے خون کے پیاسے،مرے دوستوں کے قاتل

شہیدوں کے ان حسین ،خوابوں کے قاتل

دشمنی تو رہی نہیں مرے فنکا ر ہا تھوں کے قاتل

دشمن تو دشمن ،دوست بن کر دوستوں کے قاتل

ما ؤں کی پیاروں کے ، جنت وا لوں کے قاتل

میری ماں کی بد دعا تجھ پر،ان دعاؤں کے قاتل

  قسم رہے گی عداوت ،مرے دوستوں کے قاتل

قسم ہماری محبت کی ان حسین یادوں کے قاتل

موت کیسا لگتا ہے تجھے ، مرے مسافروں کے قاتل

بد دعا ہے تجھے بنے کوئی تیرے اپنوں کے قاتل

خدا کی قسم جس نے بنایا تجھے مرے دوستوں کے قاتل

اس کی قسم تو اس کے ہی طلب گار وں کے قاتل

سکھایا تھا  مجھے یہ خزانہ میرے استادوں کے قاتل

فخر ہے اس پربچاتا ہے،تو میرے سر زمین کے قاتل

برباد ہو وہ جو پاک سر زمین کے قاتل

لڑتے رہیں گے اسلام کی اس سرزمین کے خاطر

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
اظهر المزيد

مقالات ذات صلة

اترك تعليقاً

إغلاق