تازہ ترین

چترال سکاوٹس کے زیر اہتمام سوشل سیکیورٹی کے موضوع پرسیمینار کا انعقاد

چترال (نمائندہ چترال ایکسپریس) چترال سکاوٹس کے زیر اہتمام سوشل سیکیورٹی کے موضوع پر منعقدہ سیمینا رمیں ٹریفک سے متعلق مسائل، شہر میں صفائی سے متعلق مسائل اور منشیات پر قابو پانے کے بارے میں تجاویز پیش کرتے ہوتے مقررین نے کہاکہ یہ ایسے مسائل ہیں جوکہ معاشرے کے ہر طبقے کے افراد کو بلا واسطہ یا بالواسطہ متاثر کررہی ہیں اور ان سے چھٹکارا پائے بغیر معاشرتی سکون اور ترقی ممکن نہیں ہوگا۔ اس موقع پر کمانڈنٹ چترال سکاوٹس کرنل نظام الدین شاہ کے علاوہ ڈپٹی کمشنر چترال اسامہ احمد وڑائچ، ڈی پی او عباس مجید خان مروت،ضلع نائب ناظم مولانا عبدالشکور، ڈسٹرکٹ ہیلتھ افیسر ڈاکٹر اسرار اللہ، آغا خان رورل سپورٹ پروگرام کے آر پی ایم سردار ایوب اور ایس آر ایس پی کے پراجیکٹ منیجر خادم اللہ نے اپنے اپنے اداروں کی طرف سے ان مسائل سے نمٹنے اور اس سلسلے میں زیر عمل منصوبوں اور اقدامات سے آگاہ کیاجبکہ ا یم پی اے سلیم خان نے بھی اپنی طرف سے تجاویز پیش کی۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے کرنل نظام الدین شاہ نے اس سیمینار میں چترال کے بنیادی مسائل کو اجاگر کئے گئے ہیں جن کے منفی اور مہلک اثرات چترال کے پرامن ماحول پر مرتب ہورہے ہیں اور مزید ان پر توجہ نہ دینے پر گھمبیر صورت اختیار کرسکتے ہیں۔ انہوں نے مسائل کے حل میں چترال سکاوٹس کی طرف سے ہر ممکن تعاون کا یقین دلایاجبکہ ڈپٹی کمشنر چترال کی طرف سے حال ہی میں وولنٹیرز ٹاسک فورس کی تشکیل کوانتہائی خوش آئند قرار دیتے ہوئے اس فورس کی تربیت کی پیشکش کی۔ اس سے قبل ڈی سی چترال اسامہ احمد وڑائچ نے تینوں مسائل کے حل کے سلسلے میں ضلعی انتظامیہ کے اقدامات کا ذکر کیا اور کہاکہ اگر چہ وسائل کا شدید فقدان ان کے حل میں رکاوٹ ہیں لیکن مختلف اداروں کی مدد سے یہ مسائل ایک ایک ہوکر حل ہوتے رہیں گے مگر سب سے بڑی بات کمیونٹی کو اس عمل میں شریک کرنے کی ہے جس کے لئے منظم اور مربوط اندازمیں کام شروع کیا گیا ہے اور اس سیمینار کے مقاصد میں یہ بھی شامل تھا۔ انہوں نے صفائی کے حوالے سے محکمہ صحت کی کارکردگی پر عدم اطمینان کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہاکہ بہت جلد ہی چترال کے لوگ تبدیلی کو محسوس کریں گے اورہر شعبے میں بہتری کا خود ہی احساس کرسکیں گے۔ ڈی پی او عباس مجید خان مروت نے کہا کہ ضلعے کے منشیات کے حوالے سے گزشتہ ایک سال سے انتہائی سختی برتی جارہی ہے جس کے نتیجے میں چھ سو کلوگرام سے ذیادہ چرس برامد کرکے کئی افراد کو گرفتار کئے گئے ہیں مگر یہ کام کمیونٹی کی تعاون کے بغیرادھورا رہ جائے گا جس میں ہر طبقے کو کردار نبھانا ہوگا۔ ٹریفک کے مسائل کے حوالے سے انہوں نے کہاکہ ٹریفک کے حوالے سے بھی قوانین پر سختی سے عملدرامد کو یقینی بنائی جارہی ہے مگر سوسائٹی کے باشعور افراد کا تعاون اس سلسلے میں بھی درکارہے ۔ ضلع نائب ناظم مولانا عبدالشکور نے ضلعی حکومت کے حوالے سے ان تینوں مسائل کے حل میں یقین دہانی کرائی جبکہ اے کے آر ایس پی کے ریجنل پروگرام منیجر سردار ایوب نے کہاکہ ان کے ادارے نے ان تینوں مسائل کے حل میں ایک واضح پروگرام کا حامل ہے اور نوجوان طبقے کو منشیات سے دور رکھنے کے لئے ایک جامع پروگرام چلارہی ہے جس سے ہزاروں نوجوان مستفید ہوچکے ہیں ۔ ایس آر ایس پی کے پراجیکٹ منیجر خادم اللہ نے بھی ادارے کی طرف سے تعاون کا یقین دلایا۔ ایم پی اے سلیم خان نے کہاکہ تینوں مسائل کے حل میں متعلقہ اداروں کو فعال کردار ادا کرنا چاہئے ۔
اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
مزید دیکھائیں

متعلقہ مواد

اترك تعليقاً

إغلاق