تازہ ترین

چترال سکاؤٹس اوردروش پرانہ بازار کے زمین تنازعہ پر چترال سکاؤٹس کاموقف

چترال (نمائندہ چترال ایکسپریس)دروش بازار میں چترال سکاوٹس کے دکانات خالی کرانے کے حوالے سے زمینوں پر قابض مقامی افراد کے موقف کو یکسر مسترد کرتے ہوئے چترال سکاوٹس کی طرف سے کہا گیا ہے کہ موقف واضح ہے کہ یہ سرکاری زمینات ہیں جنہیں کسی کو لیز پر نہیں دیا گیا تھاdukan taleyاور اب یہ چترال سکاوٹس کو ضرورت پڑنے پر واپس لی جارہی ہیں۔ چترال سکاوٹس کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ 1980ء کی دہائی میں چترال سکاؤٹس نے درو ش کے مجبوربے سہارااوربے روزگارلوگوں کی اپنی ہی چیک پوسٹوں اوردفاعی مقاصد کیلئے استعمال ہونے والی زمینیں دی تاکہ وہ ان میں گزر اوقات کرسکیں جن سے صرف روپے سے لے کر 10روپے تک کا برائے نام کرایہ وصول کیا جاتا تھا۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ وقت کے ساتھ ساتھ باہر سے آئے ہوئے لوگ یہاں کے معصوم لوگوں کوچترال سکاؤٹس کے خلاف بھڑکا کر زمینات پر قابض ہونے کے خواب دیکھ رہے ہیں۔ کئی دہائی سالوں تک چترال سکاوٹس سے استفادہ کرنے والے اب چند شر پسندوں کے اکسانے اور بھڑکانے پر چترال سکاوٹس کے خلاف جلسے جلوس کرکے اس فورس کو بدنام کرنے پر اتر آئے ہیں جن کے خلاف کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔


اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

متعلقہ مواد

اترك تعليقاً

إغلاق