تازہ ترین

سامبو کمپنی کی غفلت معصوم بچے ہاتھ کی انگلیاں گنوا بیٹھا

کوغذی(نمائندہ چترال ایکسپریس) گولین گول ہائیڈو پاور پروجیکٹ پر کام کرنے والی کورین کمپنی سامبو کے غفلت کی وجہ سے ایک اور بچہ موت کے آغوش میں جاتے جاتے معجزانہ طور پر بچ گیا۔ اطلاعات کے مطابق استانگول کے رہائشی پیر ہارون رشید کا بیٹا ۹ سالہ دنیال رشید بارودی مواد ہاتھ لگنے سے اپنی دائیں ہاتھ کی تین انگلیاں گنوا بیٹھا۔ پیر کے دن دنیال رشید دوسرے بچوں کے ساتھ گاوَں کے ندی میں کھیل رہا تھا کہ ان کے ہاتھ بارودی مواد لگا جن کے ساتھ کھیلتے ہوئے وہ اچانک ایک زوردار دھماکے سے پھٹ گیا ۔ دھماکہ اتنا شدید تھا کہ قریبی دیواروں میں دراڑیں پڑ گئیں۔ اور بارودی مواد بچے کے ہاتھ میں ہونے کی وجہ سے ان کا ہاتھ جھلس گیا اور وہ خود معجزانہ طور پر بچ گیا۔ دیگر بچے بھی معجزانہ طور پر محفوظ رہے۔ زخمی بچے کو قریبی ہسپتال لایا گیا اور ابتدائی طبی امداد کے بعد ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال لایا گیا جہاں اس کے داہنے ہاتھ کی تینوں انگلیاں کاٹ دی گیئں۔



سامبو کمپنی کوغذی کے مقام پر اپنی نوعیت کے بہت بڑے پراجیکٹ پر کام کررہی ہےاور وہاں پر “رسک میجمنٹ” کا ہمیشہ فقدان نظر آرہاہے اور عوامی حلقے اس پر اپنی تشویش کا اظہار کرتے آرہے ہیں۔ اس کی ایک مثال یہی ہے کہ ویسٹ مواد کو ٹرکوں میں بھر کر ندی نالوں میں پھینک دیا جاتا ہے جس میں بارودی مواد کے ساتھ ساتھ دوسرے کیمکلز بھی ہوتے ہیں جن سے ایک تو اس طرح کے حادثات ہوتے ہیں دوسرا آبی آلودگی کے سبب بھی
بنتے ہیں۔ دوسری طرف مذکورہ کمپنی ان کی طرف توجہ دینے کے بجائے خودآسائشی کے اصول پر عمل پیرا ہے۔ اس کی زندہ مثال گولین گول مشیلیک کے مقام سے کوغذی جنالی تک روڈ کی حالت دیکھ کر لگائی جاتی ہے ۔ اس روڈ پر ہیوی مشینری چلنے سے گرد اڑتا رہتا ہے جو ایک طرف تو لوگوں کی صحت پر منفی اثر ڈالتا ہے دوسرا اس کمپنی کے غیر ملکی افسران  خود اس سے گردغبار سے بچنے کے لئے اس پر پانی چھڑکتے رہتے ہیں جس سے تارکول جگہ جگہ سے ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہے اور بعید نہیں اس پروجیکٹ کے اختتام تک اس میں تارکول یاپختہ سڑک بالکل ختم ہوجائے گی۔

یاد رہے اس کمپنی کے غفلت سے ہی ٹرک کے ایک حادثے میں چار افراد جان بحق  ہوئے تھے ۔ اور ایک اور حادثے میں تیراکی کے دوران ایک نوجواں زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھا تھا۔ ارباب اختیار واقتدارسے عوامی حلقے اس بات کی اپیل کرتے ہیں کہ کمپنی کو ایک پراجیکٹ کی تکمیل تک جتنے باتوں کو ملحوظ نظر رکھنا چاہیے سامبو کمپنی بھی ان کی پیروی کرے۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
اظهر المزيد

مقالات ذات صلة

اترك تعليقاً

إغلاق