تازہ ترین

ارسون سیلاب میں جان بحق ہونے والوں کی نعشوں کی برامد گی کی تعداد 19ہوگئی،10کی تلاش جاری

چترال ( محکم الدین ) اُرسون سیلاب میں جان بحق ہونے والے پاک آرمی کے تین جوانوں کی نعشیں ملنے کے بعد برآمد ہونے والے نعشوں کی کل تعداد 19 ہوگئی ہے ۔پاک آرمی کے جوانوں سلیم تاج ، عبد الواحد ، نائیک الطاف ، باسط علی اور لانس نائیک یونس کی نعشیں بر آمد ہو چکی ہیں ۔ اسی طرح مقامی باشندوں میں سے عبد الرزاق ، ذاکر اللہ ، محب اللہ ، نعیم اللہ ، ضیاء الحق ، عبدالطیف ، آمنہ بی بی ،سبحان الدین، شفیق احمد ،محمد طاہر ، بدیع الرحمن ، محمد فیاض ، شمشاد بی بی اور ایک نامعلوم سربُریدہ نعش کی بر آمدگی کے بعد اُنہیں سپر خاک کر دیے گئے ۔ 19نعشیں برآمد ہونے کے بعد اب زیر تلاش نعشوں کی تعداد 10رہ گئی ہے ۔ جن میں سے 3 لاشیں پاک آرمی کے جوانوں اور 7اُرسون کے باشندوں کی ہیں ۔ ڈی ڈی ایم یو چترال کے مطابق لاشوں کی تلاش کا سلسلہ جاری ہے ۔ جس میں پاک آرمی ، بارڈر پولیس اور مقامی باشندے حصہ لے رہے ہیں ۔ پی ڈی ایم اے کی طرف سے متاثرہ خاندانوں تک ریلیف پہنچا دیے گئے ہیں ۔ اور پینے کے پانی کی بحالی کیلئے بھی اقدامات جاری ہیں ۔ اس کے علاوہ بڑی تعداد میں مال مویشی ، آرمی کے خچر مکانات ، دکانات باغات و زمینات سیلاب کی نذر ہوگئے ۔ اور جانی ضیاع کے علاوہ بھی نقصانات کروڑوں میں ہے۔ چترال میں گذشتہ سال کے سیلاب میں مجموعی طور پر 40افراد جان بحق ہوئے تھے ۔ جبکہ امسال قبل از وقت ہی سیلاب سے جان بحق ہونے والے افراد کی تعداد 29تک پہنچ گئی ہے ۔ جبکہ پاکستان میٹو لوجیکل ڈیپارٹمنٹ کے مطابق امسال مون سون بارشوں میں 20فیصد اضافے کے امکانات ہیں ۔ اور مسلادھار بارشوں سے غیر معمولی سیلابوں کے نتیجے میں بڑے پیمانے پر نقصانات کا خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے ۔
اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
اظهر المزيد

مقالات ذات صلة

اترك تعليقاً

إغلاق