تازہ ترینکھیلوں کی خبریں

شندورپولوفیسٹول 2016کوپرامن بنانے اورکامیاب کرنے کے لئے شندور،لاسپورکی کمیونٹی کواعتماد میں لیاجائے۔عمائدین لاسپور کا پریس کانفرنس

چترال (نمائندہ چترال ایکسپریس) ویلج کونسلر ریٹائرڈ صوبیدار شیراعظم نے کہا ہے کہ شندورپولوفیسٹول 2016کوپرامن بنانے اورکامیاب کرنے کے لئے شندور،لاسپورکی کمیونٹی کواعتماد میں لیاجائے اورکوئی ایساقدم نہ اُٹھاجائے جس سے شندورکی ملکیت متنازعہ ہونے کااحتمال ہو۔منگل کے روز چترال پریس کلب میں تحصیل کونسلرلاسپورجمال الدین اور دیگرعمائدین کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے اُنہوں نے مطالبہ کیاکہ اگروزیراعلیٰ گلگت بلتستان شندورآیاتوسپاسنامہ لاسپورکانمائندہ پیش کرے گا کسی اورکوبولنے کی اجازات نہیں ہوگی ۔شیر اعظم اوران کے ساتھیوں نے لاسپور کے عوام کی نمائند گی کرتے ہوئے اس بات پرافسوس کااظہارکیاکہ گلگت سے تعلق رکھنے والے فوجی افیسران نے چترال کے لوگوں کے مکانات اورضلعی انتظامیہ کے شلٹرگراکرحالات کوخراب کیاہے اورعوام کومشتعل کردیاہے اگریہی صورت حال رہی تولاسپور کے بیس ہزارعوام مذاحمت کرینگے اوراپنی زمین کے چپے چپے کادفاع کرینگے ۔لاسپورکے عمائدین نے یاد لایاکہ جون 1980ء میں کورکمانڈرپشاورمرزااسلم بیگ نے چترال انتظامیہ کے ذریعے شندورفیسٹول منعقدکرواکرجنرل ضیاء الحق کوشندورآنے کی دعوت دی توبھارتی میڈیانے شندورکومتنازعہ علاقہ قراردیاتھا ۔گلگت انتظامیہ اورچیف منسٹرکی طرف سے شندورکی ملکیت کادعویٰ بھارتی میڈیاکے پرویگینڈے کاتسلسل ہے لاسپوراورچترال کے محب وطن عوام اس کوکبھی تسلیم نہیں کرینگے ۔اُنہوں نے کہا کہ اگرلاسپورکے نمائندے نے سپاسنامہ پیش نہیں کیا توگلگت بلتستان کاچیف منسٹربھی شندورمیں تقریرنہیں کرسکے گ


اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
مزید دیکھائیں

متعلقہ مواد

اترك تعليقاً

إغلاق