محمد صابر

آرمی چیف کی تقرری سے آگے 

 ـ ـ ـ ـ ـ ـ محمد صابر گولدور چترال ـ ـ ـ ـ ـ ـ
آرمی چیف جنرل راحیل شریف کی مدت ملازمت مکمل ہوتے ہی جنرل قمر باجوہ نئے آرمی چیف منتخب ہوئے ہیں ـ پاکستان آرمی وہ واحد منظم ادارہ ہے جس پر ہم فخر کر سکتے ہیں باقی ادارے ہمارے محترم سیاست دانوں نے پرائویٹازیشن کے نام پر بیچ دئیے ـ نواز شریف کی حکومت اور ان کی ٹیم پڑوسی ملک کو خوش کرنے میں مگن ہے کبھی یک طرفہ تجارت تو کبھی ڈان اسکینڈل کے ذریعہ مسئلہ کشمیر کو دبانے کی بھرپور کوشش کر رہی ہے ـ آرمی پبلک سکول پر حملے کے بعد ہماری سیاسی قیادت اور  ہماری اسٹبلشمنٹ ایجینسیس نے مل کر سر توڑ کوشش کے بعد نیشنل ایکشن پلان پر متفق ہوئے اور دہشتگردی سمیت کرپشن و بدعنوانی عناصر  کے خلاف بلا امتیاز کروائی کا اعادہ کیا مگر افسوس کے ساتھ یہ کہنا پڑرہا ہے کہ سوائے ضرب عضب کے اور کسی بھی سطح  پر ہمیں کامیابی نہیں ملی صرف اور صرف سیاسی قیادت کی وجہ سے ، اس وقت پاکستان پر بھارت کی جانب سے تاریخی دباؤ ہے بلکہ پاکستانی فوج پر شدید دباؤ ہے اور اس کے علاوہ اندرونی سطح پر بھی ریاست دباؤ کا شکار ہے ـ اب تک کی انٹلیجینس رپورٹ کے مطابق بھارت کی 40 سے 60  فیصد افواج مقبوضہ کشمیر  میں موجود ہے ـ مشرقی سرحدوں پر جنگ کی سی کیفیت ہے گزشتہ ایک سال کے اندر بھارت نے تقریبا 160 حملے کیے ہیں ستمبر سے لیکر اب تک یعنی کہ صرف دو ماہ کے اندر 60 حملے کیے گئے  ہیں بھارت کی جانب سے واضح پیغام دیا جا رہا ہے کہ ہم آپ کو بلوچستان میں تنگ کرینگے ہم آپ کو افغانستان سے تنگ کرینگے اور کراچی سے اور ایل او سی پر تو کر ہی رہے ہیں اور سب سے خطرناک بات بھارتی جاسوس کلبھوشن یادو جس کا نٹ ورک سارے ملک میں پھیلا ہوا ہے باجود اس کے گرفتاری کے اس کے باقی ساتھی بھی پکڑے جا چکے ہیں امکان ظاہر کیا جارہا ہے کہ کبھی بھی اس نٹ ورک کے باقی ماندہ افراد کبھی کسی بھی لمحے  کچھ بھی کر سکتے ہیں ـ اس کے علاوہ پاکستانی میڈیا اور صحافیوں اور سیاسی ورکروں کو ریکروٹ کرنے کی کوشش بھی جاری ہے ڈان لیک کے ذریعہ پاکستان کے اندر سے کشمیر پر وار اس جیسی بے شمار باتیں جو مجھ جیسے عام پاکستانی شہری کو سوچنے پر مجبور کرتی ہیں ـ ایک طرف راحیل شریف اور ایک طرف نواز شریف عجیب و غریب منطق ہے اسٹبلشمنٹ کے مکمل تعاون کے باوجود نون لیگ نے کراچی میں ایم کیو ایم کو بچا لیا سندھ میں وسیع پیمانے پر اپریشن کرکے دہشتگردوں کا نٹ ورک توڑ دیا گیا جس کے مثبت نتائج آئے سامنے آئے ٹارگٹ کلنگ میں خاطر خوا کمی آئی شہر کا امن وامان لوٹ آیا مگر اچانک سے پھر حالات خراب ہونے لگے نشنل ایکشن پلان کے روح کے مطابق سندھ کے بعد اس اپریشن کو پنجاب تک بڑھانا تھا مگر نون لیگ اس کی راہ میں رکاوٹ ثابت ہوئی راحیل شریف کی مدت ملازمت ختم ہوتے ہی پیپلز پارٹی کے سابق صدر آصف علی زرداری سیاسی منظر پر نمودار ہوئے اور کہا کہ بہت جلد پاکستان آؤں گا ـ آپ خود ہی تجزیہ کریں اور فیصلہ کریں اس ملک کو کون لوٹ رہا ہے فوج یا سیاست دان اور کون اس ملک کی فلاح وبہبود کےلیے کام کر رہا ہے ؟ سابق جنرل راحیل شریف نے جو خدمات پاکستان کےلیے انجام دئیے تاریخ انہیں سنہرے حروف میں لکھے گی دہشتگردی کا خاتمہ ہوکہ پانچوں صوبوں میں اتفاق و اتحاد ، ریاست کی رٹ کو چیلنج کرنے والوں سے برسرپیکار ہونا  ، شمالی وزیرستان کے قبائلی عمائدین کو قومی دارے میں لانا ،  بین الاقوامی سطح پر پھر سے پاک فوج کا لوہا منوانا سب سے بڑھ کر سی پیک کو درپیش رکاوٹوں کو ایک ایک کرکے ختم کرنا اس جیسے اور بے شمار کام جو راحیل شریف کی نگرانی میں انجام پائے ـ
 حالیہ امریکی صدارتی انتخابات میں پاکستانی نمائندگان سے ایک بہت بڑی غلطی ہوئی مگر عین اسی لمحے بھارت بڑی چالاکی سے چال چل گیا ہوا یوں کہ  بھارتیوں نے ٹرمپ اور امریکی عوام کی حمایت حاصل کرنے کےلیے عالمی سطح پر ٹرمپ کی حمایت کی اور ٹرمپ جب صدارتی انتخاب جیت گیا تو بھارت میں سلیبریشنز بھی ہوئی ـ
ہم کیا کر سکتے تھے ؟
ٹرمپ ایک محب وطن ،وطن پرست شخص ہیں ہم ٹرمپ کو قائل کر سکتے تھے پاکستان کے حق میں،  آپ کو پتہ ہے امریکی صدر دنیا کی سیاسی میدان کا طاقتور ترین شخص کہلاتا ہے ـ  بین الاقوامی پالیسیسز اور مختلف اقوام پر پابندیاں اور رعایتیں یہ اور اس جیسی ممالک عائ کرنے میں کردار ادا کرتی ہیں اب آپ خود ہی اندازہ لگا سکتے ہیں پاک امریکہ تعلقات کی اہمیت و افادیت یہ ایک موقع تھا جو ہم نے گنوا دیا مگر بھارت نے بھرپور فائدہ اٹھایا ـ
اسی طرح پاکستانی میڈیا بھی اپنا کردار صحیح معنوں ادا نہیں کر پا رہی مثال کے طور پر بھارت میں آپ کو بے شمار چینلز دیکھنے کو ملیں گی ہر موضوع پر چاہے وہ انٹرٹیمنٹ ہو کہ کھیل ، سائنس ہو کہ ایڈونچر اور بچوں کےلیے بہترین اور معیاری کارٹونز مگر بد قسمتی سے ہمارا میڈیا اپنے پیروں پر کھڑا ہونے کے بجائے اینڈین کانٹنٹ کا سہارا لے رہی ہے ـ ہمارے ٹی وی اسکرینز پر اینڈین ڈرامے اینڈین فلمیں اور اینڈین کارٹونز جو کہ ہماری آنے والی نسلوں کےلیے کسی زہر سے کم نہیں ہے دیکھائی جاتے ہیں  ـ
ہم امید کرتے ہیں جو پالیسیس اور اصلاحی کام سابق جنرل راحیل شریف صاحب  نے شروع کیے تھے نئے آرمی چیف جناب قمر باجوہ صاحب انہیں جاری رکھینگے ـ اور اسی وژن کو آگے بڑھائنگے  اور کسی بھی رکاوٹ کی پرواہ نہیں کرینگے  ـ عسکری قیادت اور سول قیادت ملکر اتفاق و اتحاد کا ثبوت دیتے ہوئے دشمن کی عزائم کو خاک میں ملاتے ہوئے  پاکستان کو ترقی کی راہ پر گامزن کرینگے ـ
اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

متعلقہ

اترك تعليقاً

زر الذهاب إلى الأعلى