چترال لوئر

حاجی نسیم الرحمان اسلامی ممالک کے درمیان دو طرفہ اقتصادی اور تجارتی تعلقات کے فروغ پر زور

پشاور(نمائندہ چترال ایکسپریس )ایف پی سی سی آئی کے اسلامی ممالک کونسل کے چےئرمین حاجی نسیم الرحمان نے اسلامی ممالک کے درمیان دو طرفہ اقتصادی اور تجارتی تعلقات کے فروغ پر زور دیتے ہوئے کہاہے کہ عدم اتحاد کی وجہ سے اسلامی دنیا گونا گوں مسائل سے دوچار ہے اور اس کے حل کے لئے سب کو مل بیٹھ کر لائحہ عمل بنانا چاہےئے۔وہ فیڈریشن آف پاکستان چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے اسلامی ممالک کونسل کے پہلے اجلاس سے خطاب کررہے تھے۔اجلاس سے سے ایف پی سی سی آئی کے صدر غضنفر بلورنے بھی خطاب کیا۔اجلاس میں صوبہ پنجاب سے شہریار افتخار ملک،سندھ سے خالد تواب،خیبر پختونخوا سے عمر مسعود،گلگت بلتستان سے شکیل اور بلوچستان سے زلیخہ عزیز نے شرکت کی۔ اجلاس میںیف پی سی سی آئی کے اسلامی ممالک کونسل کے لئے الگ ویب سائٹ ،اسلامی ترقیاتی بینک کے ساتھ مضبوط تعلقات بنانے اور اسلامی ممالک کے درمیان ایک کرنسی سے تجارت کرنے پر تفصیلی بحث ہوئی۔اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ اسلامی ممالک کے تعاون سے جلد ہی تجارتی میلے کا انعقادکیا جائیگا جس سے پاکستان کے بر آمدات میں اضافہ ہوگا۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے حاجی نسیم الرحمان نے کہاہے کہ اسلامی ممالک قدرتی وسائل سے مالا مال ہیں اور ان وسائل سے فائدہ اٹھانے کے لئے سب کو یکجا کرنے کی ضرورت ہے۔ عالمگریت کے اس دور میں اسلامی ممالک کے درمیان تجارت کا فروغ انتہائی اہم ہے۔اس موقع پر فیڈریشن آف پاکستان چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر غضنفر بلور نے کہاکہ فیڈریشن تجارتی برادری کے مسائل کے حل کے لئے کوشاں ہے اور تاجروں کے مابین راوبط کو مزید بہتر بنانے کے لئے تمام وسائل کو بروئے کار لائے گی۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
زر الذهاب إلى الأعلى