تازہ ترین

صوبہ خیبر پختو نخوا کے تمام اضلاع میں تین روزہ انسداد پولیو مہم 21جنوری سے شروع ہورہا ہے

پشاور( چترال ایکسپریس ) صوبہ خیبر پختو نخوا کے تمام اضلاع میں رواں سال کی پہلی تین روزہ انسداد پولیو مہم 21جنوری بروز پیرشروع ہو رہا ہے جس میں پانچ سال سے کم عمر کے 58لاکھ سے زائدبچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلائے جاہیں گے مہم کے حوالے سے ایک اہم اجلاس ہوا جس کی صدارت کوآرڈینیٹرای او سی کیپٹن (ر) کامران آفریدی نے کی اجلاس میں بتایا گیا کہ 2018میں پولیو کیسز کی کل تعداد 10تھی جس میں 6کیسز خیبر پختونخوا سے رپورٹ ہوئے 3کیسز بلوچستان اور 1کراچی سے رپورٹ ہوا اس موقع پر ڈائر یکٹر ای پی آئی ڈاکٹر اکرم شاہ، یونیسیف ٹیم لیڈ ڈاکٹر محمد جوہر، بی ایم جی ایف کے فوکل پرسن ڈاکٹر امتیاز علی شاہ،ڈبلیو ایچ او ٹیم لیڈ ڈاکٹر عبدی ناصر ،این سٹاپ آفسر ڈاکٹر اعجازعلی شاہ اور دیگر حکام نے شرکت کی شرکاء نے پولیو کے خاتمے کے لئے ایمر جنسی آپریشن سنٹر کے موثر اقدامات پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے اسے سراہا اس موقع پر 21جنوری سے شروع ہونے والی انسداد پولیو مہم کے انتظامات کابھی جائزہ لیاانسداد پولیو مہم کے دوران58لاکھ 90ہزار852 بچوں کو پولیو کے قطرے پلائے جا ہیں گے اس مہم میں نہ صرف مکامی آبادی بلکہ صوبہ میں واقع افغان مہاجرین اور ٹی ڈی پیر کے 112کیمپوں میں بھی انسداد پولیو مہم چلائی جائے گی جس کے لئے تربیت یافتہ پولیو ورکزر پر مشتمل 27ہزار300ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں ان پولیو ٹیموں میں 19ہزار 398موبائل ٹیمیں ،1ہزار620فکسڈٹیمیں،999ٹرانزٹ ٹیمیں اور185رومنگ ٹیمیں شامل ہیں جبکہ مہم کی موثر نگرانی کے لئے 5ہزار98ایریا انچار جز کی تعینا تی عمل میں لائی گئی ہے مہم کی موثر نگرانی کے لئے 30ہزار پولیس اہلکاراور قانون نافذکرنے والے اداروں کے تعاوں سے انسدادپولیو مہم کو کامیاب بنانے کے لئے سیکورٹی کے خاطر خواہ انتظامات کئے گئے ہیں ۔
اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

متعلقہ مواد

إغلاق