تازہ ترین

چترال کے سڑکوں کی منسوخی کی بات میں صداقت نہیں ہے۔معاون خصوصی وزیرزادہ

چترال ( محکم الدین ) معاون خصوصی وزیر اعلی خیبر پختونخوا وزیر زادہ نے کہا ۔ کہ کالاش ویلی روڈ کی تعمیر اور چترال پشاور این ایچ اے روڈ کی مرمت جلد شروع کی جائے گی ۔ چترال کے سڑکوں کی منسوخی کی بات میں صداقت نہیں ہے ۔ تاہم گرم چشمہ اور اپر چترال روڈ کی تعمیر میں کچھ وقت لگ سکتا ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پشاور سے ٹیلیفون پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ وزیر اعلی سیاحت کے فروغ کیلئے چترال کی سڑکوں کی تعمیر میں انتہائی دلچسپی رکھتے ہیں ۔ اور انہوں نے وفاقی وزیر مراد سعید سے اس حوالے میٹنگ بھی کی تھی ۔ اور وزیر اعلی نے اس کا اظہار کیا تھا ۔ کہ وفاقی حکومت اگر یہ روڈ نہیں بناتی ۔ توصوبائی حکومت خود یہ سڑک تعمیر کرے گی ۔ انہوں نے کہا اس سلسلے میں مجھے جو ذمہ داری سونپ دی گئی تھی ۔ اُس کے تحت میں نے چیرمین اور جی ایم این ایچ اے سے ملاقات کی ۔ جنہوں نے بتایا ۔ کہ یہ روڈ کینسل نہیں ہوئے ۔ دستاویزات مکمل ہو چکے ہیں ، صرف زمین کی خریداری نہیں ہوئی ہے ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ فوری طور پر کلاش ویلی روڈ میں پیش رفت ہوئی ہے ۔ اور ماہ جون تک اس پر کام شروع کیا جائے گا ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ زمین کی خریداری اگر پہلے ہو چکی ہوتی ۔ تو آج مزید انتظار کی ضرورت نہ کرنی پڑتی ۔ وزیر زادہ نے کہا ۔ کہ میر کھنی سے چترال تک مین روڈ کی حالت کی خرابی کا بھی میں نو ٹس لیا ۔ اور اس سلسلے میں میں نے حالیہ ملاقات میں چیرمین اور جی ایم این ایچ اے سے تفصیلی بات کی ہے ۔ اور انشا اللہ اپریل تک اس روڈ کی مرمت کی جائے گی ۔ جس پر تقریبا آٹھ کروڑ روپے خرچ کئے جائیں گے ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ چیرمین این ایچ اے نے اس روڈ کیلئے ممبر پلاننگ اور جی ایم کو خصوصی ہدایت کی ہے ۔ اس روڈ کی مرمت کے بعد لوگوں کو کسی حد تک خراب سڑک سے نجات مل جائے گی ۔ اور سہولت کے ساتھ سفر کر سکیں گے ۔ وزیر زادہ نے کہا ۔ کہ وہ چترال کے تمام مسائل سے بخوبی آگاہ ہیں ۔ اور وہ اُن مسائل کے حل کا بھی بخوبی جذبہ رکھتے ہیں ۔ چترال کیلئے کام کرنا اُن کی اولین ترجیح ہے ۔ اس لئے چترال کے عوام افواہوں پر کان نہ دھریں ۔

Advertisements

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

متعلقہ

زر الذهاب إلى الأعلى