fbpx

اسلامی جمعیت طلبہ چترال انٹر نیٹ کی عدم دستیابی کی وجہ سے ان لائن کلاسس کو مسترد کرتی ہیں۔ ناظم اسلامی جمعیت طلباء اسلام اقبال الدین

چترال(نمائندہ چترال ایکسپریس)ناظم اسلامی جمعیت طلباء اسلام اقبال الدین اسلامی جمعیت طلبہ چترال انٹر نیٹ کی عدم دستیابی کی وجہ سے آن لائن کلاسس کو مسترد کرتے ہوئے ایک اخباری بیان میں کہا ہے کہ چونکہ کرونا وائرس جیسے وبا کی وجہ سے پوری دنیا متاثر ہے اور تمام تر نظام زندگی متاثر ہیں وہاّں تمام تعلیمی ادارے اور طالب علم بھی بری طرح متاثر ہیں ان دنوں حکومت اور ایچ ای سی کی جانب سے ان لائن کلاسس شروع کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہیں اور جامعہ چترال بھی ان لائن کلاسس شروع کرنے کا ارادہ رکھتی ہیے اس بناء پر پورے چترال خاص کرکے اپر چترال میں ایسا کوئی انٹر نیٹ کا نظام نہیں ہیں جس کے ذریعے طلباء طالبات اپنے آن لائن کلاسس لے سکے تو اسلامی جمعیت طلبہ چترال اس بنیاد پر آن لائین کلاسس کو یکسر مسترد کرتی ہے یہاں تک کہ حکومت اپر چترال میں ایسا کوئی انٹر نیٹ نظام متعارف کرائں یں جس سے با آسانی طلباء ان لائن کلاسس لے سکے اور ساتھ ہی چترال یونیورسٹی اور ڈسٹرکٹ انتظامیہ سے مطالبہ کرتے ہیں کہ اس مشکل حالات میں جامعہ چترال کے رہائشی طالب علموں کے لئے ہاسٹلز کھول دیں تاکہ وہ اسانی سے اپنے کلاسس لے سکیں۔اس کے ساتھ ہی ہم اپنے منتخب نمائندوں ایم این اے اور دونوں ایم پی ایز صاحبان اور ضلع انتظامیہ سے یہ مطالبہ کرتے ہیں کہ جو چترال کے طلباؤ طالبات لوئر ضلعوں یعنی پشاور اسلام آباد لاہور وغیرہ جو چترالی طلبہ زیر تعلیم ہیں انکے لئے بھی کوئی حکمت عملی اپنائی جائیں۔

Advertisements
اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔
إغلاق