fbpx

دروش کے گاؤں وارڈاپ میں دریا کے کنارے کھیلتے ہوئے دو بچیاں دریا کی بے رحم موجوں کے نذر ہوگئے

چترال (نمائندہ چترال ایکسپریس) اتوار کے روز دروش کے گاؤں وارڈاپ میں دریا کے کنارے کھیلتے ہوئے دو بچیاں دریا کی بے رحم موجوں کے نذرہوگئے جن کا تعلق مہمند ضلع سے ہے اور اپنی ماں کے ساتھ دروش میں ننھیال آئے ہوئے تھے۔ دروش پولیس اسٹیشن سے حاصل کردہ معلومات کے مطابق عائشہ (عمر12سال)اور ہادیہ (عمر 10سال) دختران فہیم اللہ ساکن مہمند ضلع دوسرے بچوں کے ساتھ وارڈاپ کے قریب دریا کے قریب کھیل رہے تھے کہ دونوں بچیاں دریا میں گر گئے جوکہ آج کل درمیانی درجے کی طغیانی سے دوچار ہے۔ مقامی لوگوں نے فوری طور پر کوشش کرتے ہوئے عائشہ کی لاش دریا سے برآمد کرلی جبکہ ہادیہ کی لاش کے لئے مقامی لوگ اور ریکسیو 1122کا عملہ سخت کوششوں میں مصروف ہیں۔ مقامی لوگوں نے بتایاکہ دروش کے حکیم آباد سے تعلق رکھنے والے رحیم اللہ کی بیٹی کی شادی کئی سال پہلے ضلع مہمند (سابق مہمند ایجنسی) میں ہوئی تھی اور وہ کئی روز پہلے اپنے بچوں اور بچیوں کے ساتھ ننھیال آئی ہوئی تھی۔

Advertisements
اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔
إغلاق