تازہ ترین

سرحدوں کی حفاظت کے لئے ہمیشہ قربانیاں دینے والے ارندو میں بسنے والے کوہ برادری کے مشکلات پر توجہ دی جائے۔محمدعلی خان

چترال(شہریار بیگ سے) پاک آفغان بارڈر پر واقع ارندو لشٹ کی رہائشی کوہ برادری سے تعلق رکھنے والی معروف شخصیت محمد علی خان نے پریس کلب چترال میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ارندو لشٹ میں بسنے والے تقریباً 80گھرانوں پر مشتمل کوہ آبادی موجودہ دور میں زندگی کی بنیا دی سہولتوں سے محروم ہیں۔ریاستی دور میں کوہ برادری کو ایک خاص مقصد کے تحت ارندو لشٹ میں آباد کیا گیا تھا۔ریاستی دور کے خاتمے کے ساتھ ہی ہماری طرف سے توجہ ہٹا دی گئی جس کے بعد کوہ برادری کے مشکلات میں اضافہ ہوتا رہا اور کوہ برادری ہمیشہ حکومتی امدادی پیکیجز سے محروم رہا۔حکومت کی طرف سے دی جانے والی سولر سسٹم کی سہولت سے کوہ برادری محروم رہا۔ارندو لشٹ کے عوام پینے کے صاف پانی سے محروم ہیں پائپ لائن بچھاتے وقت ٹھیکہ دار کام ادھورا چھوڑ کر چلا گیا۔کھلے نالوں کا الودہ پانی پینے سے آئے روز علاقے میں مختلف قسم کی بیماریاں پھیلتی ہیں۔جبکہ بیماروں کو دروش ہسپتال لاتے ہوئے کئی مقامات میرکھنی،دامیڑ،گودی بار،لنگور بٹ اور ارندو چیک پوسٹوں پر مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے خصوصاً تشویشناک حالت می مبتلا مریض کو بھی رات کے وقت ہم کہیں نہیں لے جا سکتے ہیں۔

Advertisements

اُنہوں نے ارندو لشٹ کے کوہ برادری کی طرف سے وزیر اعظم پاکستان عمران خان آرمی چیف جنرل باجوہ اور کور کمانڈر پشاور سے اپیل کی کہ ارندو میں بسنے والے کوہ برادری کے مشکلات پر توجہ دی جائے اس برادری نے ملک کی سرحدوں کی حفاظت کے لئے ہمیشہ قربانیاں دی ہیں سچے پاکستانی اور محب وطن لوگ ہیں۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

متعلقہ

زر الذهاب إلى الأعلى