تازہ ترین

چیرمین زکواۃ کمیٹی چترال محمد قاسم نے اپرچترال بونی میں مستحقین زکواۃ میں چیک تقسیم کی۔

چترال(ذاکر محمد زخمی)جمعہ11دسمبر کو ضلع اپر چترال کے ہیڈ کوارٹر بونی میں مستحقین زکواۃکے مابین چیک تقسیم کرنے کے عرض ایک مختصر پُر وقار تقریب ضلعی ہیڈ کوارٹر اپر چترال بونی کے ایک مقامی ہوٹل میں منعقد ہوئی جس میں تحریکِ انصاف اپر چترال کے قائدین کے علاوہ مختلف طبقہ ہائے فکر کے افراد نے شرکت کی۔تقریب میں ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر مستوج شاہ عدنان، ڈسٹرکٹ ایجوکیشن افیسراپر چترال ذولفقار الملک، ڈسٹرکٹ سپورٹس افیسر فاروق اعظم تحریک انصاف اپر چترال کے جنرل سیکرٹری افتاب۔ایم۔طاہر، نائب صدر تحریک انصاف احسان الحق،جنرل سیکرٹری تحریک انصاف مستوج دیدار علی میرؔ،لوکل چیر مین زکواۃ بونی 1بابر علی،لوکل چیرمین بونی2 سعید اللہ،، و دیگر شریک تھے۔نظامت کے پی ٹی آئی کے ضلعی نائب صدر احسان الحق نے انجام دی۔ مہمانِ خصوصی اسسٹنٹ کمشنر مستوج شاہ عدنان تھے۔ جنرل سیکرٹری تحصیل مستوج دیدار علی میرنے مہمانوں کو خو ش آمدید کہتے ہوئے تقریب کے اغراض و مقاصد بیان کی۔ضلعی جنرل سیکرٹری افتاب۔ایم طاہر نے اپنے خطاب میں کہا کہ تحریکِ انصاف کی حکومت نظام میں شفافیت پر یقین رکھتی ہے۔ سابقہ ادوار میں شاید اتنی شفافیت زکواۃ کی تقسیم میں نہ ہوئی ہو جس کی وجہ سے مستحقین کے حقوق صحیح معنوں میں ان تک نہیں پہنچی۔ موجودہ حکومت کی شفافیت کی پالیسی کے بدولت اس کی مکمل ثمرات سے مستحقین مستفید ہوتے ہیں جو کہ ایک احسن اقدام ہے۔ دوسرے مقررین میں ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر اپر چترال ذولفقار الملک، ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر مستوج شاہ عدنان و ِدیگر نے موجودہ ضلعی چیرمین محمد قاسم کی کارکردگی پر انہیں خراجِ تحسین پیش کی ان کے جذبہ خدمت کو سراہتے ہوئے امید ظاہر کی کہ ان کی موجودگی میں زیادہ سے زیادہ مستحقین مستفید ہونگے۔ ضلعی چیرمین محمد قاسم نے اپنے خطاب میں کہا کہ اس طرح کے تقریب کا انعقاد کسی بھی نمود و نمائش سے مبرا ہے۔ہم صرف لوگوں کو اگاہی دینے کے غرض سے ہر علاقے میں تقریب منعقد کرتے ہیں جہاں چند ایک لوگوں کو مدعو کرکے انہیں یہ احساس دلاتے ہیں کہ حکومت وقت آپ کے مسائل و پریشانی سے غافل نہیں۔اس تقریب کے تواسط سے آگاہی کے ساتھ ساتھ لوگوں کو مثبت پیغام دینا مقصود ہے۔اور شفافیت کی پیغام کو اُجاگر کرکے ہر خاص و عام تک پہنچانا ہے۔ اُنہوں نے کہا کہ ائیندہ کے لیے ہر مستحق کی چیک لوکل چیرمین ان کے دروزے تک عزت و احترام سے پہنچائے گا۔ اس قسم کی کوئی تقریب پھر منعقد نہیں ہوگی۔شفافیت کا مزید ذکر کرتے ہوئے چیرمین زکواۃ کمیٹی چترال نے کہا کہ اس وقت نظام کو ایسا بنایا گیا ہے کہ جس میں بدعوانی کی کوئی گنجائش باقی نہیں۔انہوں نے کہا کہ چترال میں انتہائی قلیل مدت میں تقریباً اٹھ ہزار مستحق لوگوں کے ڈیٹا جمع کیے گئے ہیں اور انہیں کمپیوٹرائز نظام سے منسلک کیا گیا ہے۔ جو وضع کردہ قواعد کی تحت کام کر رہا ہے اس میں کسی دوسرے کی کوئی عمل دخل نہیں۔اور یہ سلسلہ رکنے والا نہیں میرٹ کی بنیاد پر سب اس سے مستفید ہونگے۔اُنہوں نے کہا کہ میری خواہش اور کوشش ہے کہ چترال میں زیادہ سے زیادہ مستحقین اس سے فائدہ اٹھا سکے۔ تقریب کے اختتام پر محدود مستحقین میں چیک تقسیم کیے گئے۔اور باقی کے چیک ان کے گھروں میں پہنچائے جائینگے۔

Advertisements

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

متعلقہ

زر الذهاب إلى الأعلى