تازہ ترین

چترال۔عوامی نیشنل پارٹی کا ملک میں بڑھتی ہوئی مہنگائی ،بے روزگاری اور کرپشن کے خلاف احتجاجی مظاہرہ اور ریلی

چترال ( محکم الدین )عوامی نیشنل پارٹی چترال نے صوبائی صدر خواتین ونگ خدیجہ چترالی اور ضلعی صدر اے این پی لوئر چترال عیدالحسین کی زیرقیادت ملک میں بڑھتی ہوئی مہنگائی ،بے روزگاری اور کرپشن کے خلاف اتوار کے روز چترال میں ایک ریلی نکالی ۔ اور پریس کلب چترال کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا ۔ جس میں بڑی تعداد میں اے این پی کے مقامی رہنما اور کارکنان موجود تھے۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے خدیجہ چترالی ، عیدالحسین ، ایم آئی خان سرحدی ایڈوکیٹ اور صلاح الدین طوفان نے کہا ۔ کہ موجودہ حکومت پاکستان کی تاریخ کی بد ترین سلیکٹڈ حکومت ہے۔ جس کی نا اہلی اور کرپشن کی وجہ سے ملک دیوالیہ پن کو شکار ہو چکا ہے ۔ مہنگائی آسمان کو چھو رہی ہے ۔ بے روز گاری انتہا کو پہنچ گئی ہے ۔ اور نوجوان تعلیمی اسناد لے کر دربدر کی ٹھوکریں کھا رہے ہیں ۔ اور غریب طبقہ زندگی کی قید سے آزاد ہونے کیلئے خود کشیاں کر رہےہیں ۔ لیکن نا اہل حکومت اور ان کے سپورٹرز کے کانوں جوں تک نہیں رینگتی ۔ کیونکہ کرپشن سے تجوریاں بھری جارہی ہیں ۔ جن کی وجہ سے عوام کیلئے سوچنے اور مسائل کم کرنے کے حوالے سے ان کے پاس وقت نہیں ہے ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ پاکستان موجودہ نااہل اور عقل سے عاری افراد پرمشتمل حکومت کی وجہ سے آئی ایم ایف اور دیگر بیرونی قرضوں میں ڈوب گیا ہے ۔ جہاں سے نکلنا مشکل نظر آتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان کی عوام کے ساتھ کئے گئےایک کروڑ نوکریاں نظر آئے ہیں اور نہ پچاس لاکھ گھروں سے کوئی ایک گھر دیکھنا نصیب ہوا ہے ۔ الٹا جن لوگوں کے پاس سایہ تھا ۔ نا اہل حکومت نے ایسے لاکھوں لوگوں کے سر سے چھت اور روزی روٹی بھی چھین لی ۔ لیکن افسوس کا مقام ہے ۔ کہ تمام سیاسی پارٹیوں کو سانپ سونگھ گیا ہے ۔ اور کوئی بھی اس نا انصافی اور مہنگائی کے خلاف میدان میں آنے کیلئے تیار نہیں ہے ۔یہ عوامی نیشنل پارٹی ہی ہے ۔ جو اس ظلم اور زیادتی کے خلاف میدان میں اتری ہے ۔ اور عوام کو اس حکومت سے چھٹکارہ حاصل کرنے کیلئے ہمارا بھر پور ساتھ دینا ہو گا ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ جن کی بھیساکیوں پر موجودہ حکومت قائم ہوئی ۔ آخر ان لوگوں کی پاکستان کے بائیس کروڑ عوام سے کیا دشمنی تھی ۔ کہ اس نا اہل کا انتخاب کیا ۔ اب تو اس کی ناقص کارکردگی دیکھنے کے بعد تو اس کو چلتا کرنا چاہئیے ۔ تاکہ قوم اور ملک مزید تباہی سے بچ جائے ۔ خدیجہ چترالی نے کہا ۔ کہ عمران خان نے تبدیلی کے نام پر پاکستان کا جو حشرکیا ۔ اب تو لوگ مطالبہ کر رہے ہیں ۔ کہ ہمیں ہمارا پرانا پاکستان ہی واپس کیا جائے۔ جہان نہ اتنی کرپشن ، ظلم ،مہنگائی ، بے روزگاری تھی اور نہ غریب لوگ محروم و مایوس ہو چکے تھے ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ اے این پی نے چترال میں اپنے دور حکومت میں اربوں روپے تعلیم ، صحت ، آبپاشی اور آبنوشی سکیموں پر خرچ کی ۔ اور بلا سود قرضے دیے ۔ جن کا دروازہ موجودہ حکومت نے مکمل طور پر بند کر دیا ہے ۔ اور کوئی بھی ایک پراجیکٹ یہاں نظر نہیں آرہا۔ انہوں نے کہا ۔ کہ چترال یونیورسٹی آج بھی اپنی عمارت سے محروم ہے ۔ پرانی عمارت کا رنگ تبدیل کر نے کے سواکچھ بھی نہیں کیا گیا ۔ خدیجہ چترالی نے مہنگائی کے خلاف احتجاج میں شرکت کرنے پر ضلع تحصیل ویلج قیادت و کارکناں کے جذبے کو سراہا ۔ اور کہا ۔ کہ موجودہ حکومت نے محکمہ ہیلتھ اور ریسکیو 1122 کے ملازمین کی بھرتیوں میں بڑے پیمانے پر کرپشن کی ہے ۔ اورا امیدواروں سے تین تین لاکھ روپے لئے گئےہیں ۔ صدر عید الحسین نے موجودہ حکومت کی طرف سے اپنی نااہلی اور کرپشن چھپانے کیلئے میڈیا پر بے جا پابندیوں کی پر زور مذمت کی اور کہا ۔ کہ اس سلسلے میں ہماری پارٹی صحافت کی آزادی کیلئے صحافیوں کا بھر پور ساتھ دے گی۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔