تازہ ترینمضامین

میلین سمائلز فائونڈیشن کا بلڈ ڈونیشن کیمپ:تحریر (اشتیاق احمد)

اسلام تمام انسانوں کے ساتھ پیار و محبت کا درس دیتا ہے،صحابہ کرام اپنی ضرورتوں پر دوسروں کو ترجیح دیتے تھے اور انسانوں سے پیار و محبت اور ضرورت مند انسانوں کی مدد کے عمل کو ہر دین اور مذہب میں تحسین کی نظر سے دیکھا جاتا ہے لیکن دین اسلام نے خدمت انسانیت کو بہترین اخلاق اور عظیم عبادت قرار دیا ہے۔اس عظیم خدمت انسانی کو پیش نظر رکھتے ہوئے Million Smiles چترال نے بلڈ ڈونیشن کیمپ کا پیرا میڈیکل انسٹی ٹیوٹ فار میڈیکل سائنسز میں انعقاد کیا اور آج طلبہ و طالبات کا جوش اور ولولہ دیکھ کے دل کو قرار اور سکون نصیب ہوا کہ میلین سمائلز کے ہمارے ممبرز خدمت انسانی کے جذبے کو اپنے سینوں میں لئے ہر وقت ہماری پکار پہ لبیک کہنے لو تیار بیٹھے ہیں۔
ملین سمائلز کا بنیادی مقصد ہی لوگوں کے چہروں پہ مسکراہٹیں بکھیرنے اور ان کے شانہ بشانہ رھ کے اس عظیم مشن کو آگے لوگوں تک پہنچانے کا ہے اور اس کو بحسن و خوبی انجام دہی کی جانب گامزن ہے۔
بطور سٹی لیڈ میلین سمائلز چترال میں اس چیز پہ خداوند تعالٰی کا جتنا بھی شکر ادا کروں کم ہے کہ مجھے لوگوں کی خدمت کرنے کے جذبے سے سرشار ایسے نوجوان طلبہ۔و طالبات عطا کئے ہیں کہ آج کل کے اس پر فتن دور میں بھی دوسروں کا درد سینے میں لئے اپنی پڑھائی اور زندگی کی دوسری مصروفیات کو ایک طرف رکھ کے دوسروں کو فوقیت دیتے ہوں۔
آج ہم نے PIMS میں بلڈ ڈونیشن کیمپ کا انعقاد کیا جس میں جس جانفشانی سے ہمارے ممبرز نے کام کیا وہ لائق صد تحسین ہے اس عظیم مشن میں ہمارے ساتھ کالج انتظامیہ خاص کر ڈائریکٹر انہار خالق صاحب اور جناب محمد شاہد صاحب اس کے علاوہ عدیل لیبارٹری کے ذمہ داران جناب اسفندیار صاحب(جو باوجود صحت کی خرابی کے) اعجاز صاحب ، لیبارٹری میں موجود محمد شاہ اور باقی ہمارے دوست احباب نے بغیر کسی دنیائی لالچ کے جس جذبے خلوص اور لگن سے اس کام کو انجام تک پہنچایا اس کی مثالیں بہت کم ہیں جن کو نہ کوئی مالی فائدے کا امکان تھا اور نہ ہی دنیائی حرث ولالچ کی حوس صرف اور صرف خدمت انسانی کا جذبہ دلوں میں دھڑک رہی تھی اور اس کا عملی مظاہرہ نظروں کے سامنے آیا اس پر ان کا شکریہ ادا کرنے کے لئے الفاظ کی کمی کو میں شدید انداز میں محسوس کر رہا ہوں اور دل سے یہی دعا ان کے لئے نکل رہی ہے رب ذوالجلال ان کے مشکلات اور مسائل کو اپنے خاص فضل و کرم سے حل کردے آمین۔
چترال کے مشہور و معروف پھتالوجسٹ ڈاکٹر جناب شجاع احمد صاحب ،جناب ڈاکٹر ولی صاحب اور جناب حسن صاحب نے کیمپ کا دورہ کیا اور طلبہ و طالبات کو خون کا عطیہ کرنے اور اس کے انسانی جسم پر فوائد کے حوالے سے بھی آگاہ کیا۔اس مشن میں ہمارے ساتھ ہراول دستے کا کردار ادا کرنے والے معروف سماجی کارکن جناب عنایت اللّٰہ اسیر صاحب بھی پیچھے نہ رہے اور ہمارے ساتھ کیمپ میں موجود رہے۔
میلین سمائلز کے ہمارے ممبرز آج داد و تحسین کے مستحق ہیں کہ باوجود کسی بھی قسم کے مالی وسائل اور فائدے کے انھوں نے ایک تاریخ رقم کی اور آنے والی نسلوں کو بھی سبق دے گئے کہ دلوں میں اگر خلوص اور نیت صاف اور جذبہ صرف خدمت انسانی ہو تو دنیائی وسائل نہ بھی ہوں تو یہ اللّٰہ تعالٰی کی مدد اور خاص نصرت سے حاصل ہو سکتی ہے چونکہ میلین سمائلز ایک چیرٹی فائونڈیشن ہے اور اس کے ذمہ داران اور ممبرز سارے صرف اور صرف رب کی رضا اور خوشنودی کے ساتھ قیامت میں سرخروئی کے لئے بر۔سر پیکار رہتے ہیں۔
اس کیمپ میں کثیر تعداد میں بلڈ گروپبگ اور سمپلنگ کے علاوہ کافی تعداد میں طلبہ نے اپنا خون عطیہ کیا اور اس خون کو کسی مجبور و بے کس انسان تک پہنچانے کا اعادہ کیا اور چترال کے مختلف ہسپتالوں میں دور دراز سے علاج کیلئے آتے ہیں اور بر وقت خون کی دستیابی نہ ہونے کی وجہ سے قیمتی جانوں کے ضیاع کا بھی نھی موقع دیکھنے کو ملتا ہے اور باقاعدہ طلبہ و طالبات نے اپنا گروپ ٹیسٹ کرواکے مناسب وقت پہ خون دینے کا عہد کیا اور اسی طرح آج کا یہ بلڈ ڈونیشن کیمپ اس امید کے ساتھ اختتام پذیر ہوا کہ یہ پہلا بلڈ کیمپ تو تھا لیکن آخری ہر گز نہیں ہو گا اور انشاء اللّٰہ تعالٰی اس طرح کے فلاح انسانی کے کام باقی علاقوں تک پھیلائے جائیں گے انشاء اللّٰہ۔ اللّٰہ تعالٰی کی گئی کاوشوں کو شرف قبولیت بخشے آمین

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں

زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔