صوبہ خیبرپختونخواکے 29اضلاع میں 28فروری سے 5 روزہ انسداد پولیو مہم کے دوران 62 لاکھ سے زائد بچوں کو پولیو قطرے پلانے کا ہدف مقرر

پشاور(چترال ایکسپریس)صوبہ خیبرپختونخواکے 29اضلاع میں 28فروری سے 5 روزہ انسداد پولیو مہم کے دوران 62 لاکھ سے زائد بچوں کو پولیو قطرے پلانے کا ہدف مقررکیاگیا ہے جس کے لئے 30,822ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں جبکہ مہم کے دوران قانون نافذ کرنے والے اداروں کے 43ہزار سے زائد اہلکار سیکورٹی ڈیوٹی سرانجام دیں گے یہ فیصلہ انسداد پولیو مہم کے انتظامات اور تیاریوں کے حوالہ سے ایمرجنسی آپریشن سنٹر(ای او سی)خیبرپختونخوا میں منعقد اعلی سطحی اجلاس کے دوران کیا گیا ای او سی کوآرڈینیٹر عبدالباسط نے اجلاس کی صدارت کی جبکہ اس موقع پر ڈپٹی کوآرڈینیٹر زمین خان،بی ایم جی ایف کے ٹیکنیکل فوکل پرسن، یونیسیف، ڈبلیوایچ او، این سٹاف ٹیم لیڈ اور دیگر معاون اداروں کے نمائندوں نے بھی شرکت کی اجلاس کو بتایا گیا کہ متعدد چیلنجز اور مشکلات کے باوجودایمرجنسی آپریشن سنٹر کے زیراہتمام حکومت، محکمہ صحت، معاون اداروں اور بالخصوص پولیو ورکرز کی دن رات کاوشوں کے نتیجہ میں صوبہ میں پولیو کے خلاف نمایاں کامیابیاں حاصل کی گئی ہیں۔ صوبہ میں ایک سال سے زائد عرصہ کے دوران پولیو کا کوئی کیس رپورٹ نا ہوناایک اہم سنگ میل ہے مہم کی تفصیلات بتاتے ہوئے عبدالباسط نے کہا کہ پیرسے شروع ہونے والی انسداد پولیو مہم کے لئے مجموعی طور پرپانچ سال سے کم عمر کے62لاکھ24ہزار792 بچوں کوپولیو سے بچاؤ کے قطرے پلانے کا ہدف مقررکیا گیا ہے جس کے لیے تربیت یافتہ پولیو ورکرز کی30,822ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں جن میں 27,610موبائل ٹیمیں 1,909 فکسڈ ٹیمیں 1,155ٹرانزٹ ٹیمیں اور148رومنگ ٹیمیں شامل ہیں جبکہ ان ٹیموں کی موثر نگرانی کے لئے7,446ایریا انچارجز تعینات رہیں گے۔ انہوں نے کہا کہ مہم کے دوران پولیو ٹیموں کی سیکورٹی کے لئے جامع انتظامات کئے گئے ہیں اور پولیس و دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کے 43ہزار سے زائد اہلکار تعینات کئے جائیں گے۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔