وزیراعلیٰ محمود خان کا گورنر شاہ فرمان اور کور کمانڈر پشاور لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید کے ہمراہ امام بارگاہ حسین آباد کا دورہ

سانحہ کوچہ رسالدار کے سانحے کے شہداءکےلئے فاتحہ خوانی کی۔

پشاور(چترال ایکسپریس)وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے ہفتے کے روز گورنر خیبر پختونخوا شاہ فرمان اور کور کمانڈر پشاور لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید کے ہمراہ کوہاٹی گیٹ پشاور میں واقع امام بارگاہ حسین آباد کا دورہ کیا اور وہاں پر سانحہ کوچہ رسالدار کے سانحے کے شہداءکےلئے فاتحہ خوانی کی۔ انہوں نے اہل تشیع کے رہنماو¿ں اورشہداءکے لواحقین سے دلی ہمدردی اور تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے شہداءکے درجات کی بلندی اور پسماندگان کے لئے صبر جمیل کی دعا کی جبکہ ہسپتالوں میں زیر علاج سانحے کے زخمیوں کے لئے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔
اس موقع پر اس اندوہناک واقعے کی شدید الفاظ میں مذمت اور ملک سے دہشت گردی کے خاتمے کے لئے مل کر جنگ لڑنے کے عزم کا اظہار کیا گیا۔ واقعے کو انتہائی افسوسناک اور قومی اتحاد و اتفاق کو خراب کرنے کی کوشش ہے قرار دیتے ہوئے گورنر، وزیر اعلیٰ اور کور کمانڈر نے کہا کہ پوری قوم کو اس طرح کے بزدلانہ واقعات کے پیچھے دشمن کے مقاصد کو سمجھنا ہوگا اور دشمن کے ناپاک عزائم کو ناکام بنانے کے لئے آپس میں اتحاد اور اتفاق کا مظاہرہ کرنا ہوگا۔ اس موقع پر اپنی گفتگو میں وزیر اعلیٰ محمود خان کا کہنا تھا کہ اس سانحے میں جو نقصان ہوا اس کا آزالہ نہیں ہوسکتا لیکن اس واقعے کے مجرمان کو ہر صورت کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا اور واقعے کے مجرمان تک پہنچنے اور آئیندہ ایسے واقعات کی روک تھام کو یقینی بنانے پر کام کر ہو رہا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہم اپنی کمزوریوں کوٹھیک کریں گے اور سرذد ہونے والی غلطیوں سے سبق سیکھ کر آگے کا لائحہ عمل طے کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ صوبہ بھر میں عبادت گاہوں کی سکیورٹی کو فول پروف بنانے کے لئے ٹھوس اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں اور جو عناصر قوم میں نفاق پیدا کرنے کی کوشش کر رہے ہم مل جل کر ان کو ناکام بنائیں گے۔ وزیر اعلی کا کہنا تھا کہ
یہ جنگ مشکل ضرور ہے لیکن ہم مل جل کر لڑیں گے تو کامیاب ہونگے اور دشمن کو ضرور شکست دیں گے۔
اپنی گفتگو میں کور کمانڈر لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید کا کہنا تھا کہ سکیورٹی فورسز، حکومت اور عوام کے تعاون سے دہشت گردی کے اس ناسور کو ختم کرنے کے لئے پر عزم ہے، اس مقصد کے لئے تمام اداروں کے درمیان کوآرڈینیشن کو مزید بہتر بنایا جا رہا ہے اور ملک میں امن و امان کو یقینی بنانے اور دشمن کے ناپاک عزائم کو ناکام بنانے کے لئے تمام وسائل بروئےکار لائے جائیں گے۔
اہل تشیع کے رہنماو¿ں نے تعزیت کے لئے تشریف لانے پر گورنر، وزیر اعلیٰ اور کورکمانڈر کا شکریہ کیا اور دشمن کے مذموم مقاصد کو ناکام بنانے کے لئے آپس میں قومی اتحاد و اتفاق کو مزید مضبوط بنانے کے عزم کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ وہ پر امن لوگ ہیں اور کسی بھی سیاسی جماعت کو اس واقعے پر اپنی سیاست چمکانے نہیں دیں گے۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔