چترال کے مسائل کو حل کرنےکے جذبے کے تحت آیا ہوں خدمت کو عبادت سمجھتا ہوں،وجیہ الدین

چترال(محکم الدین)سابق ضلع ناظم مغفرت شاہ نے کہا ہے ۔ کہ جماعت اسلامی چترال عام نوجوانوں کو لیڈر شپ کیلئے سامنے لانے پر یقین رکھتی ہے۔ جبکہ بعض دیگر پارٹیوں نے عوامی خد مت کے اس عہدے کیلئے شہزادوں کو پارٹی ٹکٹ دے دیےہیں ۔ جو کہ ان کا کام نہیں ہے ۔ اسلئے چترا ل کے عوا م خدمت کے جذبے سے سرشار نوجوان قیات کو سپورٹ کریں ۔ تاکہ چترال کے مسائل حل ہو سکیں ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ایون درخناندہ میں پیر کی شام ایک انتخابی کارنر میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر جماعت کے دیگر رہنما اور سنئیر کارکنان کے علاوہ بڑی تعداد میں مقامی لوگ موجود تھے ۔ مغفرت شاہ نے کہا کہ جماعت اسلامی نےتحصیل کونسل چترال کیلئے ایک آسان اور نوجوان امیدوار سامنے لانے کی کوشش کی ہے ۔جو وجیہ الدین کی صورت میں آپ کے سامنے حاضر ہے ۔ جس نے فروغ تعلیم کیلئے چترال میں نا قابل یقین خدمات انجام دی ہیں ۔ امیدوار تحصیل کونسل وجیہ الدین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ چترال مسائل کا گڑھ ہے اور میں ان مسائل کو حل کرنےکے جذبے کے تحت آیا ہوں خدمت کو عبادت سمجھتا ہوں اور ان مسائل کو انشاللہ خوش اسلوبی سے حل کروں گا ۔ انہو ں نے کہا ۔ کہ جماعت اسلامی میں کسی کی مرضی نہیں چلتی اور نہ تحصیل کونسل میں چیر مین شپ الیکشن کیلئے میں خود میدان میں آیا ہوں ۔ بلکہ جماعت اکابریں نے یہ ذمہ داری مجھ پر ڈال دی ہے ۔ انہوں نے کہا  کہ زندگی بھر ہم نے سوشل ورک کا تجربہ کیا ہے  اور چترال کے موجودہ مسائل کے بارے میں معلومات اور ان کا حل میرے پاس موجود ہے۔میں عوام میں سے ہوں اور عوام ہی میں رہتا ہوں۔ اس لئے ووٹ کے حصول کیلئے کسی کو سبز باغ دیکھانےکا قائل نہیں ہوں ۔ لیکن یہ بات واضح کرنا مناسب سمجھا ہوں کہ میں عوام کا حق ضائع نہیں ہونے دونگا ۔ انہوں نے کہا کہ چترال کی پسماندگی کی بڑی وجہ کرپشن ہے ۔ ادارے رشوت ستانی اور کمیشن کے اڈے بن گئے ہیں ۔ اورعوام کسمپرسی کی تصویر بنی ہوئی ہے ۔ انشاللہ اگر کامیاب ہوا تو علاقے کے مسائل حل کرنے کی بھر پور کوشش کروں گا ۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔