کوہ اور اپر چترال میں بدترین لوڈ شیڈنگ ختم کرنے کا ایم این اے عبدالاکبر چترالی کادعوی مضحکہ خیز ہے،اعجاز احمد خان

چترال (نمائندہ چترال ایکسپریس)علاقہ کوہ کے مقبول عوامی رہنما اور ویلج کونسل کوغذی کے جنرل نشست کے امیدوار اعجاز احمد خان نےکوہ اور اپر چترال میں بدترین لوڈ شیڈنگ ختم کرنے کا کریڈٹ لینے کی ایم این اے عبدالاکبر چترالی کی کوشش کو مضحکہ خیز قراراور ‘پرائے کی شادی میں عبداللہ دیوانہ’ کے مصداق قرار دے دیا ہے۔ ایک اخباری بیان میں انہوں نے کہا ہے کہ عوام کوہ اور اپر چترال بخوبی جانتے اور سمجھتے ہیں کہ کس نے اس سلسلے میں کیا کردار ادا کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جب گرڈ اسٹیشن اسٹاف نے شدید عوامی دباٶ کے مدنظر ایم این اے صاحب کو آفر کردی کہ ایم این اے صاحب ایک دفعہ گرڈاسٹیشن آکر اپنے ہاتھوں سے بریکر آن کرکے بجلی لاٸن میں چھوڑ نے کی دعوت دی تو ایم این اے صاحب کی ‘کانپیں ٹانگ ‘ گئے تھے اور انہیں ایک منتخب عوامی نمائندہ ہونے کے ناطے بھی ایسا کرنے کرنے کی ہمت نہ کرسکا تھا۔ انہوں نے کہا کہ جب پی ٹی آئی والوں کی کوشش سے بجلی عارضی طور پر بحال ہو گٸی تو موصوف روایتی طور پر کریڈٹ لینے پہنچ گئے ہیں۔اعجاز آحمد خان نے کہا کہ ہم نوجوانان کوغذی نے اس سلسلے میں ہر فورم پر اپنا احتجاج بھرپور طریقے سے ریکارڈ کرایا اور پاور ہاوس کو بند کرنے کی دھمکی دی ہمیں ہر طرح سے ڈرانے کی کوشش کی گٸی لیکن ہم اپنے موقف پر ڈٹے رہے اور اگر اج بجلی بحال نہ کی جاتی تو ہم نے کل واپڈا گیٹ کے سامنے میڈیا والوں کو بلا کر چیرمین واپڈا کا پتلا جلانے کا مصمم ارادہ کیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ مذہب کے نام پر ووٹ بٹورنے والے ایم این اے اور ایم پی اے چترال کی تاریخ کے ناکام ترین نمائندے ہیں مگر یہ پھر بھی عوام کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کی ناکام حرکات سے باز نہیں آرہے ہیں۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔