خیبرپختونخوا کے عوام کے حقوق کا ہر قیمت پر تحفظ کریں گے اور اپنے حقوق چھین کر رہیں گے۔۔وزیراعلی محمود خان

بونیر(چترال ایکسپریس) وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے کہا ہے کہ امپورٹڈ اور نا اہل حکمران خیبرپختونخوا میں آٹے اور گندم کی سرحد پار سمگلنگ کی باتیں کرکے یہ تاثر دینے کی ناکام کوشش کر رہے ہیں کہ پختون اسمگلر ہیں مگر میں انہیں بتانا چاہتا ہوں کہ پختون سمگلر نہیں بلکہ پاکستان کے محافظ ہیں جنہوں نے اس ملک میں امن کےلئے بیش بہا قربانیاں دی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اگر آٹا یا گندم سرحد پار سمگل ہو بھی رہا ہے تو بارڈر منیجمنٹ کے تمام ادارے وفاقی حکومت کے ماتحت ہوتے ہیں نہ کہ صوبائی حکومت کے جس سے یہ واضح ہوتا ہے کہ اس اسمگلنگ میں وفاق میں بیٹھے امپورٹڈ حکمران خودبھی ملوث ہیں۔

 وہ جمعہ کے روز بونیر میں پاکستان تحریک انصاف کے زیر اہتمام ایک عوامی جلسے سے خطاب کر رہے تھے۔ وزیراعلیٰ کا کہنا تھا کہ امپورٹڈ حکمرانوں نے پنجاب میں آٹے کی ایک قیمت مقرر کی ہے جبکہ خیبر پختونخوا کیلئے کوئی اور قیمت مقرر کی ہے جو ان کی طرف سے خیبرپختونخوا کے عوام کے ساتھ بہت بڑا ظلم ہے لیکن میں واضح کرنا چاہتا ہوں کہ ہم خیبرپختونخوا کے عوام کے حقوق کا ہر قیمت پر تحفظ کریں گے اور اپنے حقوق چھین کر رہیں گے۔انہوں نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ امپورٹڈ وزیراعظم صرف اور صرف پنجاب کی باتیں کرتے ہیں، اسے دوسرے صوبوں کی نہ کوئی فکر ہے اور نہ وہ ان کےلئے کچھ کر رہے ہیں جبکہ ہمارے قائد عمران خان کو تمام وفاقی اکائیوں کی فکر ہے اوروہ تمام وفاقی اکائیوں کو مضبوط کرنے کی بات کرتے ہیں۔

 محمود خان کا کہنا تھا کہ نااہل حکمرانوں نے غریب عوام پر مہنگائی کا پہاڑ گرادیا ہے ، آئے روز اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں بے تحاشہ اضافہ ہو رہا ہے جبکہ عمران خان نے اپنے دور حکومت میں انہی وسائل سے اشیائے ضروریہ کی قیمتوں کو بھی کنٹرول کر رکھا تھا اور عوام کو ریلیف دینے کےلئے متعدد پروگرامز بھی چلا رہا تھالیکن موجودہ حکمرانوں کو غریب عوام کی کوئی پرواہ نہیں، ان کے پاس عوام کودینے کےلئے کچھ نہیں اور وہ صرف اپنی چوری چھپانے میں مصروف ہیں ۔

<<><><><><><><><>>

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔