متاثرین شادیرریشن کے نمائندگان اورمعتبرارت کی ہنگامی اجلاس،صوبائی حکومت، محکمہ سی اینڈ ڈبلیو،ایری گیشن اور ضلعی انتظامہ کی بھر پور مذمت

اپرچترال (چترال ایکسپریس)گذشتہ روزمتاثرین شادیرریشن کے نمائندگان اورمعتبرارت کاایک اہنگامی اجلاس منعقد ہوئی ۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے سید سردار حسین شاہ اور دوسروں نےصوبائی حکومت، محکمہ سی اینڈ ڈبلیو،ایری گیشن اور ضلعی انتظامہ کی بھر پور مذمت کرتے ہو کہا کہ 15 ماہ گزرنے کے باوجود ریشن متاثریں کو زبانی اور تحریری معاہدے کے باوجود اب تک زمین کا معاوضہ ادا نہیں کیا گیا جو کہ بحیثیت معزز شہریوں کے ساتھ ظلم اور ناانصافی کے مترادف ہے ۔انہوں نے کہا کہ وادی ریشن کا پورا علاقہ قدرتی آفات کے زد میں آگیا ہے متعلقہ حکام اور ادارے عید کی چھٹیوں میں مصروف ہے متاثریں شادیر اپنے نمائندے کے طور پر گاوں کے چار معتبرارت کے نام دئےکر حکومتی اور غیر حکومتی اداروں سے مذکورہ مسئلے کو حل کرنے کا با اختیار فیصلہ کر سکیں کمیٹی کے ممبران میں سید سردارحسین شاہ، حاجی عبدالرب، حیات الدین اور محمد نبی خان شامل ہیں ۔ آج کے بعد متا ثریں سے متعلق تمام فیصلے کمیٹی کرے گی لہذا بذریعہ پریس ریلیزہذاصوبائی حکومت ، متعلقہ ادارے اور ضلعی انتظامہ کو خبردارکی جاتی ہےکہ جون 2021 کو روڈ کے لیے متاثریں سے لی گئ زمین کا معاوضہ ادا کیا بعیر کوئی بھی مشینری متاثرہ جگہ لانے کی صورت میں علاقے میں مزید کشیدگی ہوگی اور حالات انتہائی خراب ہونے کا خدشہ ہے خدانحوستہ حالات خراب ہونے کی صورت میں صوبائی حکومت متعلقہ ادارے اور ضلعی انتظامہ ذمہ دار ہونگے ۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔