وزیر اعلیٰ محمود خان کا ضلع ٹانک و کرک کا دورہ، سیلاب متاثرین میں امدادی چیکس تقسیم کیے

وزیر اعلیٰ کا ٹانک کی یونین کونسل پائی کےلئے 20 کروڑ، کرک کی تحصیل تخت نصرتی کےلئے 30 کروڑ روپے خصوصی پیکج کا اعلان

کرک(چترال ایکسپریس)وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے سیلاب سے متاثرہ اضلاع کرک اور ٹانک کا دورہ کیا جہاں انہوں نے ٹانک کے علاقہ پائی اور دیگر سیلاب زدہ علاقوں جبکہ ضلع کرک کی تحصیل تخت نصرتی میں سیلاب سے متاثرہ مقامات کا دورہ کیا اور نقصانات کا جائزہ لیا۔وزیراعلیٰ نے اس موقع پر مذکورہ علاقوں کے سیلاب سے جاں بحق افراد کے لواحقین میں فی کس تین لاکھ روپے کے چیکس تقسیم کیے اور اعلان کیا کہ انہیں مزید پانچ لاکھ روپے فی کس دیے جائیں گے۔انہوں نے مکمل تباہ شدہ گھروں کے لیے چار لاکھ روپے فی گھر جبکہ جزوی طور پر نقصان زدہ گھروں کے لیے ایک لاکھ 60 ہزار روپے فی گھر دینے کا اعلان کیا۔وزیراعلیٰ نے کرک اور ٹانک کی ضلعی انتظامیہ کو عوامی نمائندوں کی معاونت سے ایک ماہ کے اندر نقصانات کا تخمینہ لگا کر رپورٹ مرتب کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے تحصیل تخت نصرتی میں سیلاب سے متاثرہ انفرا سٹرکچر کی بحالی کے لیے تیس کروڑ روپے جبکہ ضلع ٹانک کی یونین کونسل پائی کے لیے بیس کروڑ روپے خصوصی پیکج کا اعلان کیا۔محمود خان نے اس موقع پر سیلاب متاثرین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وہ موسم کی خرابی کی وجہ سے قدرے تاخیر سے آئے ہیں تاہم عوام مطمئن رہیں۔آ پ کا وزیراعلیٰ آپ کے ساتھ کھڑا ہے، آپ تنہا نہیں ہیں۔ وزیر اعلیٰ نے یقین دلایا کہ صوبائی حکومت متاثرین کی ہر ممکن مدد کرے گی،ہم مشکل مالی حالات کے باوجود حالات کا مقابلہ کریں گے۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ عوام الناس کے مسائل کا ازالہ پی ٹی آئی کا منشور اور عمران خان کا وژن ہے یہی وجہ ہے کہ عام آدمی کو ریلیف کی فراہمی صوبائی حکومت کی شروع سے ترجیح رہی ہے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ ٹانک شہر کیلئے گومل زام ڈیم سے صاف پانی کی فراہمی ایک سال کے اندر شروع ہو جائے گی جبکہ دیگر جنوبی اضلاع میں پینے کے پانی کے مسائل کے حل کےلئے بھی اقدامات کر رہے ہیں، محمودخان نے اس موقع پر متعلقہ حکام کو ندی نالوں وغیرہ پر تجاوزات کے خلاف بلا تفریق آپریشن کرنے کی ہدایت کی اور کہا اگر تجاوزات نہ ہوتیں تو 80 فیصد نقصان سے بچ جاتے۔ وزیراعلیٰ نے واضح کیا کہ قدرتی آبی گزرگاہوں پر موجود تجاوزات کا مکمل خاتمہ کرنا ہے۔ محمود خان نے سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں بہتر انداز میں خدمات کی فراہمی پر محکمہ ریلیف اور دیگر متعلقہ اداروں کو خراج تحسین پیش کیا۔
صوبائی وزیر برائے ریلیف اقبال وزیر ، رکن صوبائی اسمبلی پختون یار، سابق اراکین قومی اسمبلی شاہد خٹک اور علی امین گنڈاپور کے علاوہ ڈویژنل کمشنرز اور دیگر متعلقہ حکام بھی اس موقع پر موجود تھے۔ سیلا ب متاثرین سے علی امین گنڈا پور اور شاہد خٹک نے بھی خطاب کیا۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔