جامعہ چترال میں ”05آگست یوم استحصال کشمیر“ کے حوالے سے وائس چانسلر پروفیسرڈاکٹر ظاہر شاہ کی زیرنگرانی مختلف تقریبات کا انعقاد

چترال(چترال ایکسپریس)صوبائی حکومت اور ہائیر ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کی خصوصی ہدایت پر مورخہ05آگست کو جامعہ چترال میں ”05آگست یوم استحصال کشمیر“ کے حوالے سے وائس چانسلر پروفیسرڈاکٹر ظاہر شاہ کی زیرنگرانی مختلف تقریبات کا انعقاد کیا گیا۔تقریبات کا باقاعدہ آغاز ایک منٹ کی خاموشی سے کیا گیا جس کے بعد طلباء اور طالبات کی علیحدہ علیحدہ ریلیوں میں وائس چانسلر یونیورسٹی آف چترال نے شرکت کی۔
شعبہ اردو اور جامعہ چترال کے مختلف شعبہ جات نے”05آگست یوم استحصال کشمیر“ کے حوالے سے مختلف سرگرمیوں کا انعقاد کیا جس میں 05آگست 2019کو مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت کو منسوخ کرنے کے خلاف احتجاج کیا گیا تقریبات میں جامعہ چترال کے ملازمین طلباء اور طالبات کثیر تعدا د میں شریک ہوئے۔
علاوہ ازیں شعبہ اردو جامعہ چترال کی طرف سے”05آگست یوم استحصال کشمیر“کے حوالے سے آگاہی مہم کا بھی انعقاد کیا گیا جس میں طلباء اور طالبات کو یوم استحصال کے حوالے سے جموں کشمیر میں ہندوستان کی جانب سے کرفیو کے نفاذ ارٹیکل370اورA35کی منسوخی اور کشمیری عوام پر ظلم وبربریت کے حوالے سے پمفلٹ تقسیم کیے گئے۔
وائس چانسلرجامعہ چترال نے ”05آگست یوم استحصال کشمیر“ کے حوالے سے اپنے خصوصی پیغام میں کشمیری عوام کے ساتھ مکمل یک جہتی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہم05آگست2019کو مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت کومنسوخ کرنے،فوجی محاصرے،یک طرفہ اور غیر قانونی اقدامات کے خلاف شدید احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ ارٹیکل370اورA35کی منسوخی کو تاریخ ہمیشہ یوم سیاہ کے طورپر یادرکھی گی اور مشکل کی ہر گھڑی میں پوری پاکستانی قوم بلکہ پوری امت مسلمہ اپنے کشمیری بھائیوں کے ساتھ کھڑی ہے۔

اس خبر پر تبصرہ کریں۔ چترال ایکسپریس اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں
زر الذهاب إلى الأعلى
error: مغذرت: چترال ایکسپریس میں شائع کسی بھی مواد کو کاپی کرنا ممنوع ہے۔